گلگت بلتستان الیکشن : تحریک انصاف 9 سیٹس لے کر سب سے آگے

نومبر 16 2020: (جنرل رپورٹر) گذشتہ چند ہفتوں کے سیاسی جلسوں اور تقاریب کے بعد بالآخر گلگت بلتستان کی عوام نے اپنی تیسری قانون ساز اسمبلی منتخب کرنے کے لئے اپنا ووٹ کاسٹ کر دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق ووٹنگ اتوار کی صبح 8:00 بجے شروع ہوئی اور اسی دن شام 5:00 بجے ختم ہوئی۔

 پاکستان تحریک انصاف نے 10 نشستیں حاصل کیں ، آزاد امیدواروں نے سات اور پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) نے تین نشستوں پر کامیابی حاصل کی ہے۔ مجلس وحدت المسلمین (ایم ڈبلیو ایم) ، جو تحریک انصاف کی اتحادی ہیں ، نے کل 23 حلقوں میں سے 1 انتخابی کامیابی حاصل کرنے میں کامیابی حاصل کی ہے جبکہ غیر سرکاری اور غیر مصدقہ نتائج کے مطابق ، مسلم لیگ نواز (مسلم لیگ ن) صرف دو سیٹیں حاصل کرنے میں کامیاب رہی ہے۔

مندرجہ ذیل کچھ حلقوں کے نتائج پیش کئے جا رہے ہیں۔

 جی بی اے 2

 پی ٹی آئی کے امیدوار فتح اللہ خان نے جی بی اے 2 سیٹ کے لئے پی پی پی کے حریف جمیل احمد کے خلاف کامیابی حاصل کی۔ پی ٹی آئی کے امیدوار نے 6،696 ووٹ حاصل کیے جبکہ 6،694 ووٹوں کے ساتھ پیپلز پارٹی کے امیدوار رف دو ووٹوں سے کامیابی حاصل نا کر سکے۔

 جی بی اے 6

 تحریک انصاف کے عابد اللہ بیگ 6،600 ووٹوں کے ساتھ فتح حاصل کرنے میں کامیاب رہے۔

جی بی اے 7 

پی ٹی آئی کے راجہ ذکریا خان مقپون نے جی بی اے 7 کے انتخابات میں اپنے پیپلز پارٹی کے حریف سید مہدی شاہ ، سابق G-B وزیر اعلی ، کو شکست دی۔

 جی بی اے 11

 جی بی اے 11 میں پی ٹی آئی کے سید امجد علی نے 5،733 ووٹوں کے ساتھ آزاد امیدوار سید مسین رضوی کو شکست دی ، جو 2016 میں کامیاب ہوئے تھے۔

یہ بھی پڑھیں | وزیر اعظم آج تربت کے لئے تاریخی ترقیاتی پیکج کا اعلان کریں گے

 جی بی اے ۔12

 جی بی اے-12 میں  پی ٹی آئی کے امیدوار راجہ اعظم خان نے پیپلز پارٹی کے عمران ندیم کو شکست دی اور 7،534 ووٹ حاصل کیے۔ 

 جی بی اے 17 

پی ٹی آئی کے امیدوار حیدر خان نے 5،389 ووٹوں کے ساتھ جی بی اے 17 نشست اپنے جے یو آئی (ف) کے حریف رحمان خالق کے مقابلے میں حاصل کی۔

 جی بی اے ۔20

 پی ٹی آئی کے نذیر احمد نے یہ نشست 5،582 ووٹوں سے حاصل کی جبکہ انہوں نے مسلم لیگ کے خان اکبر خان کو شکست دی جو 3،815 ووٹ حاصل کرنے میں کامیاب رہے۔

 گلگت بلتستان الیکشن کمیشن سے حاصل کردہ اعداد و شمار کے مطابق ، کل 745،361 افراد نے ووٹ ڈالنے کے لئے اندراج کیا جن میں سے 339،992 خواتین ہیں۔ زرائع کے مطابق 24 حلقوں میں قریب 1،234 پولنگ اسٹیشن قائم کیے گئے تھے ،جن میں 415 کو انتہائی حساس قرار دیا تھا۔ 

گلگت کے چیف الیکشن کمشنر راجہ شہباز خان نے جی بی اے ون اور جی بی اے 2 کے مختلف پولنگ اسٹیشنوں کے اپنے دورے کے دوران انتخابی انتظامات ، عمل اور سیکیورٹی سے متعلق امور پر اطمینان کا اظہار کیا۔ 

میڈیا سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پولنگ کا عمل دن بھر آسانی سے جاری رہا اور پورے خطے میں کسی بھی امیدوار یا رائے دہندگان سے کوئی شکایت یا تحفظات موصول نہیں ہوئے۔

شئر کریں

جاویریہ حارث

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *