وزیر اعظم شہباز شریف کا نوجوانوں کے آئیڈیاز کے لئے “انوویشن ہب” کا آغاز

  ٹی وی چینل کی رپورٹ کے مطابق، وزیر اعظم شہباز شریف نے اعلان کیا ہے کہ وہ ذاتی طور پر نئے شروع کیے جانے والے انوویشن ہب کو فروغ دیں گے اور حکومت تمام وزارتوں میں باصلاحیت نوجوانوں کے لیے خصوصی سیل قائم کرے گی تاکہ وہ قومی پالیسی سازی کے لیے اپنے جدید آئیڈیاز پر کام کرنے کی حوصلہ افزائی کریں۔ 

قومی ترقی میں نوجوانوں کی شمولیت

جمعہ کو اسلام آباد میں انوویشن ہب کی لانچنگ تقریب کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے شہباز شریف نے کہا کہ اس اقدام کا مقصد قومی ترقی میں نوجوانوں کی شمولیت کی حوصلہ افزائی کرنا ہے۔ 

وزیر اعظم کے وژن کے تحت قائم ہونے والا، انوویشن ہب تمام اسٹیک ہولڈرز بالخصوص ملک کے باصلاحیت نوجوانوں اور افرادی قوت کے خیالات کو شامل کرکے ملک کی ضروریات سے ہم آہنگ پالیسی سازی میں اہم کردار ادا کرے گا۔ 

شہباز شریف نے کہا کہ جدید منصوبے کو اسٹیک ہولڈرز کی جانب سے قیمتی آراء ملے گی تاکہ حکومت کو اپنی قومی پالیسیوں کو بہتر اور بہتر بنانے میں مدد ملے۔ 

انہوں نے کہا کہ جدید تعلیم اور ٹیکنالوجی کی آج کی دنیا میں بہت اہمیت ہے اور ماہرین، دانشوروں اور نوجوانوں پر زور دیا کہ وہ اپنی تجاویز کے ذریعے حکومت سے رابطہ کریں۔ 

انہوں نے تحقیقی کام کی اہمیت پر زور دیا تاکہ عوام الناس کے فائدے کے لیے مختلف مضامین کے امکانات کو تلاش کیا جا سکے۔ 

 وزیراعظم نے کہا کہ وہ ذاتی طور پر انوویشن ہب کو فروغ دیں گے جو نوجوانوں کے لیے ایک موثر پلیٹ فارم کے طور پر کام کرے گا۔ 

یہ بھی پڑھیں | بکرا عید: پاکستان میں عید الاضحی 10 جولائی کو ہو گی

یہ بھی پڑھیں | کرتارپور ہماری مذہبی  آزادی کو ظاہر کرتا ہے، جنرل قمر جاوید باجوہ

وزیراعظم نواز شریف نے کہا کہ نوجوانوں کے شاندار خیالات کو پالیسی سازی میں شامل کیا جائے گا تاکہ انہیں مزید عملی شکل دی جا سکے۔ 

 وزیر اعظم کے سٹریٹجک ریفارمز کے سربراہ سلمان صوفی نے کہا کہ وزیر اعظم شہباز شریف کے وژن کے تحت انوویشن ہب کے قیام کا بنیادی مقصد “عوام کو عوامی پالیسی میں واپس لانا” ہے۔ 

 انہوں نے کہا کہ اپنے علاوہ فیصل باری، مشرف زیدی، شاہ رخ وانی اور عائشہ رضا فاروق پر مشتمل ماہرین کا پینل خیالات کو حتمی شکل دے گا۔ 

 انہوں نے کہا کہ منتخب تجاویز وزیراعظم کو پیش کی جائیں گی جو بعد میں قومی پالیسی کا حصہ بن جائیں گی۔ 

 انہوں نے مزید کہا کہ یہ پہلا موقع ہوگا جب عام عوام کو قومی پالیسی سازی میں شامل کیا جائے گا۔ 

اس موقع پر موجود نوجوانوں نے خواتین کی ترقی، سیاحت اور ہوٹل مینجمنٹ، ٹیکنالوجی اور تعلیمی نصاب میں بہتری کی ضرورت کے بارے میں اپنی رائے دی۔

حرمین رضا

حرمین رضا اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔