نارتھ وزیرستان میں سات دہشتگرد ہلاک، آئی ایس پی آر

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کی جانب سے جاری کردہ ایک بیان

  پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کی جانب سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ اتوار کو سیکیورٹی فورسز نے خیبر پختونخوا کے ضلع شمالی وزیرستان میں فائرنگ کے تبادلے میں سات دہشت گردوں کو ہلاک کر دیا۔

 فوج کے میڈیا ونگ کے مطابق غلام خان کیلے کے علاقے میں مارے گئے دہشت گردوں سے اسلحہ اور گولہ بارود برآمد ہوا جو سیکیورٹی فورسز کے خلاف متعدد دہشت گردی کی کارروائیوں میں سرگرم رہے۔ 

 آئی ایس پی آر کے مطابق شدید فائرنگ کے تبادلے کے دوران صوبیدار منیر حسین (عمر 44 سال، پاراچنار، کرم کا رہائشی) اور حوالدار بابو خان ​​(عمر 38 سال، رہائشی ڈی آئی خان) نے بہادری سے لڑتے ہوئے جام شہادت نوش کیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں | خیبر پختونخواہ میں کانگو وائرس کے چھ کیسز رپورٹ  

یہ بھی پڑھیں | الرٹ: پاکستان میں ایک دفعہ پھر کوویڈ کیسز میں اضافہ  

اس نے مزید کہا کہ علاقے کی کلیئرنس آس پاس میں پائے جانے والے دیگر دہشت گردوں کو ختم کرنے کے لیے کی جا رہی ہے۔ فوج نے ایک بیان میں کہا کہ ایک دن پہلے، شمالی وزیرستان کے ضلع دوسالی جنرل علاقے میں انٹیلی جنس پر مبنی آپریشن میں کم از کم چار دہشت گرد مارے گئے۔ 

آئی ایس پی آر کے مطابق مارے گئے دہشت گردوں سے اسلحہ اور گولہ بارود بھی برآمد ہوا ہے۔ 

 ایک ہفتہ قبل شمالی وزیرستان کے علاقے میران شاہ میں دہشت گردوں سے جھڑپ میں پاک فوج کا ایک جوان شہید ہوا تھا۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

ہمارا نیوز لیٹر جوائن کریں
تازہ ترین آرٹیکلز، نوکریوں اور تفریحی خبریں ڈائریکٹ اپنے انباکس میں حاصل کریں
یہاں ایک لاکھ ستر ہزار سبسکرائبرز ہیں