مصنف کے بارے میں

صفحۂ اول

تبصرے

    مہنگی بجلی مہنگائی کو جنم دیتی ہے ، وزیراعظم عمران خان

    وزیر اعظم عمران خان نے جمعہ کے روز 4303 میگاواٹ داسو ہائیڈرو پاور پروجیکٹ کی تعمیر میں چین اور پاکستانی انجینئرز اور کارکنوں کی مشترکہ کاوشوں کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ ڈیم قومی ترقی کے لئے انتہائی اہمیت کا حامل ہے کیونکہ اس سے بجلی کی سستی قیمت پر ضروریات پوری ہوں گی۔ 

     انہوں نے کہا کہ مہنگی بجلی مہنگائی کو جنم دیتی ہے۔ ڈیم کی تعمیر ایک مشکل کام ہے جس کے لئے میں غیر ملکی انجینئروں سمیت تمام کارکنوں کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں۔

     وزیر اعظم نے داسو ڈیم میں زیر تعمیر سرنگوں اور دیگر حصوں کا دورہ کرنے کے بعد پاکستانیوں اور چینی انجینئروں کے ایک اجتماع سےخطاب میں ریمارکس دیئے کہ انہیں یہ احساس ہی نہیں ہوا تھا کہ داسو ڈیم اتنا پیچیدہ اور مشکل منصوبہ ہے۔ 

    انہوں نے کہا کہ میں نے لمبی سرنگ بھی دیکھی ہے اور وہاں کام کرنے کے لئے ہمت کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ ملک میں بجلی کی قلت پر قابو پانے کے لئے اس طرح کے میگا پروجیکٹس بہت پہلے شروع کیے جانے چاہئیں تھے۔

     انہوں نے کہا کہ پچاس سال قبل جب منگلا اور تربیلا ڈیم بنائے گئے تھے تب تک پاکستان کی ترقی ہوئی اور اس کی صنعتوں کو فائدہ ہوا۔ انہوں نے مزید کہا کہ دیامر باشا ڈیم بھی ایک ہائیڈرو الیکٹرک منصوبہ ہے جو اب زیر تعمیر ہے۔ 

    انہوں نے مزید کہا کہ منگلا اور تربیلا ڈیموں سے ملک کو صاف ستھری اور سستی بجلی ملتی ہے اور ملک کی صنعتوں نے اس سے فائدہ اٹھایا۔ اور وہ وقت دور نہیں جب داسو ڈیم اور دیگر منصوبوں کی تکمیل کے بعد ملک کو سستی بجلی ملے گی۔ 

    ہماری معیشت تیزی سے ترقی کر رہی ہے اور سستی بجلی کے حصول سے صنعتی اور گھریلو ضروریات پوری ہوں گی اور ملک خوشحالی کی راہ پر گامزن ہوگا۔

    بھی پڑھیں | روپیہ دو سال کی بلند ترین قیمت پر آ گیا 

     وزیر اعظم کو بریفنگ دیتے ہوئے واپڈا کے چیئرمین ریٹائرڈ لیفٹیننٹ جنرل مزمل حسین نے کہا کہ پٹن (لوئر کوہستان) ، تھاکوٹ (بٹگرام) اور خیر آباد (اٹک) میں دریائے سندھ پر تقریبا 7 7000 میگا واٹ بجلی پیدا کرنے کی مجموعی بجلی کے ساتھ مزید 3 ایسے مزید ڈیم تعمیر کیے جائیں گے۔ 

    انہوں نے بتایا کہ داسو ڈیم کا پہلا مرحلہ 2025 میں مکمل ہونے جارہا ہے اور قومی گرڈ کو 2،160 میگا واٹ بجلی کی فراہمی شروع کردی جائے گی۔ انہوں نے مزید کہا کہ 2029 میں دوسرے مرحلے کی تکمیل کے بعد ، ڈیم کی بجلی پیداواری صلاحیت 4،320 میگا واٹ ہوجائے گی۔

     انہوں نے کہا کہ منصوبے پر کام تیزی سے جاری ہے اور ڈیم کی تعمیر کے لئے اراضی کے حصول اور متعلقہ منصوبوں اور فلاحی منصوبوں کو پاکستان تحریک انصاف حکومت کے وژن کے مطابق پہلے ہی مکمل کرلیا گیا ہے۔

     مزمل حسین نے کہا کہ ہم ملک کے آبی وسائل کو بہتر طریقے سے استعمال کر رہے ہیں تاکہ ملک کو خوشحالی اور ترقی کی راہ پر گامزن کیا جاسکے۔

    جاویریہ حارث

    جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

    سبسکرائب
    کو مطلع کریں
    guest
    0 Comments
    Inline Feedbacks
    View all comments
    0
    آپ اس متعلق کیا کہتے ہیں؟ اپنی رائے کمنٹ کریںx
    ()
    x