مصنف کے بارے میں

صفحۂ اول

مزید کوویڈ۱۹ ویکسنز کو رجسٹرڈ کیا جائے گا، گورنمنٹ آفیشل

اتوار کے روز پاکستان میں 2،521 نئے کوویڈ۱۹ کیسز اور 43 اموات ہوئی ہیں۔ 

‎ وزارت نیشنل صحت سروسز (ایم این ایچ ایس) نے اعلان کیا ہے کہ آئندہ ہفتوں میں ملک میں مزید ویکسین رجسٹرڈ کی جائیں گی۔

یہ بھی پڑھیں | اسلام آباد ہائیکورٹ کے فیصلے کے مطابق نعیم بخاری کو پی ٹی وی چئرمین کے عہدے سے ہٹا دیا گیا

‎ نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سنٹر (این سی او سی) کے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق ، پنجاب میں 43 اموات میں سے50 فیصد سے زیادہ کی اطلاع ملی ہے۔ چھ ، سندھ ، خیبر پختونخوا اور اسلام آباد میں اموات ہوئی۔ اور تین آزاد جموں و کشمیر (اے جے کے) میں فوت ہوئے۔

‎ ایم این ایچ ایس کے ترجمان ساجد شاہ نے نجی نیوز کو بتایا کہ ملک میں آئندہ ہفتوں میں مزید ویکسین رجسٹرڈ کی جائیں گی۔ آسٹر زینیکا ملک میں ہنگامی استعمال کے لئے رجسٹرڈ ہے اور یہ ویکسین کوواکس کے ذریعہ آئے گی ، جس نے وعدہ کیا ہے کہ یہ ویکسین فراہم کرے گی جس میں ملک کی 20 فیصد آبادی کا احاطہ ہوگا۔ 

یہ بھی پڑھیں | کوویڈ19 کے باوجود پاکستان کی معاشی حالت مسلسل بہتر ہو رہی ہے، عمران خان

‎یاد رہے کہ کوواکس ایک اتحاد ہے جو عالمیاتحاد برائے  ویکسین اور حفاظتی ٹیکوں ، اتحاد برائے مہاماری تیاری انوویشنز (سی ای پی آئی) اور عالمی ادارہ صحت نے گذشتہ سال اپریل میں قائم کیا تھا۔ اس اتحاد نے پاکستان سمیت مختلف ممالک کی 20 فیصد آبادی کے لئے مفت ویکسین کی فراہمی کا وعدہ کیا ہے۔ 

‎انہوں نے مزید کہا کہ ویکسین کے اندراج سے نجی شعبے کے ذریعہ ویکسین کی درآمد کا ایک دروازہ کھلا ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت جلد سے جلد قطرے پلانے کی پوری کوشش کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ جب ایک بار فرنٹ لائن کارکنان اور 65 سال سے زیادہ عمر کے لوگوں کو قطرے پلائے جائیں گے ، تو ہم ان لوگوں کو قطرے پلائیں گے جن کی عمریں ساٹھ سے ۶۵ کے درمیان ہیں۔

‎ تاہم ، ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی آف پاکستان کے ایک عہدیدار نے بتایا کہ کراچی سے تعلق رکھنے والی ایک کمپنی ، ’’ سندھ میڈیکل اسٹور ‘‘ نے آسٹر زینیکا کی ویکسین رجسٹر کردی ہے۔ اگرچہ یہ ویکسین کسی نجی کمپنی نے رجسٹرڈ کردی ہےلیکن مجھے نہیں لگتا کہ یہ ویکسین اگلے چند مہینوں میں مارکیٹ میں دستیاب ہوجائے گی۔ 

‎حقیقت یہ ہے کہ یہ ویکسین پوری دنیا میں دستیاب نہیں ہے اور یہ رواں سال کی دوسری سہ ماہی کے اختتام تک دستیاب نہیں رہے گی۔ جبکہ کوویڈ۱۹ کی وجہ سے ملک بھر میں ہونے والی اموات 10،951 ہوگئیں اور پنجاب میں 4،409 افراد لقمہ اجل بن گئے۔ سندھ میں 3،775؛ کے پی میں 1،779؛ اسلام آباد میں 456؛ 190 بلوچستان میں؛ اے جے کے میں 241؛ اور 101 گلگت بلتستان میں۔

‎ اعداد و شمار سے پتہ چلتا ہے کہ ملک بھر میں 334 وینٹیلیٹر استعمال میں ہیں۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔