لاکھ سے تین لاکھ کمانے والوں پر 12 فیصد ٹیکس عائدایک 

وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے کہا ہے کہ ایک لاکھ سے تین لاکھ روپے ماہانہ تنخواہ پر 12 فیصد ٹیکس لگایا جائے گا، سپر ٹیکس بینکوں اور شوگر انڈسٹری پر بھی لگایا جائے گا، سپر ٹیکس ایک بار ہوگا۔ 

بجلی کی سبسڈی پر 1500 ارب روپے خرچ ہوئے

 جیو نیوز کے پروگرام ’نیا پاکستان‘ میں گفتگو کرتے ہوئے مفتاح اسماعیل نے کہا کہ گزشتہ سال بجلی کی سبسڈی پر 1500 ارب روپے خرچ ہوئے، کبھی آئی ایم ایف نے ہماری بات مانی اور کبھی ہم نے ان کی بات مانی۔

یہ بھی پڑھیں | پاکستان کی اسٹاک مارکیٹ ایشیاء کی تیسری بدترین کارکردگی والی بن گئی  

یہ بھی پڑھیں | روپیہ ایک بار پھر ڈالر کے مقابلے میں 200 ہو گیا   

 مفتاح اسماعیل نے کہا کہ پچھلی حکومت نے ہمیں ڈیفالٹ کے راستے پر چھوڑ دیا، میرے خیال میں ہمیں پیٹرول اور بجلی پر سبسڈی نہیں دینی چاہیے تھی۔

 وزیر خزانہ نے کہا کہ دکانوں پر 3 ہزار سے 10 ہزار روپے تک کا فکسڈ ٹیکس لگایا گیا ہے، 30 ہزار سونے کی دکانوں میں سے صرف 22 رجسٹرڈ ہیں۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

ہمارا نیوز لیٹر جوائن کریں
تازہ ترین آرٹیکلز، نوکریوں اور تفریحی خبریں ڈائریکٹ اپنے انباکس میں حاصل کریں
یہاں ایک لاکھ ستر ہزار سبسکرائبرز ہیں