صرف جلد الیکشن سے ہی معاشی صورتحال بہتر ہو سکتی ہے، عمران خان

سیاسی بحران سے نکلنے کا واحد راستہ

 پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین عمران خان نے اس بات کا اعادہ کیا ہے کہ نئے الیکشن کمشنر کے تحت قبل از وقت انتخابات ہی ملک میں گہرے ہوتے معاشی اور سیاسی بحران سے نکلنے کا واحد راستہ ہے۔

پاکستانی عوام ایک قوم میں بدل چکے ہیں

 سابق وزیر اعظم نے بدھ کو قوم سے اپنے ٹیلی ویژن خطاب میں کہا کہ پاکستانی عوام ایک قوم میں بدل چکے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ حکمران جماعت کے تمام “ہتھکنڈوں” کے باوجود پی ٹی آئی جس طرح کامیاب ہوئی وہ ایک معجزہ تھا۔ 

پی ٹی آئی کے سربراہ نے اصرار کیا کہ جب وہ اقتدار میں تھے تو ملک کے پاس صحیح معاشی اشارے تھے اور انہوں نے اس بارے میں “طاقتور حلقوں” کو خبردار کیا تھا۔ 

 انہوں نے کہا کہ ہم زرعی محاذ پر تیز رفتاری سے کام کر رہے تھے جس میں چاروں بمپر فصلوں میں پیش رفت دیکھنے میں آئی ہے۔

 انہوں نے مزید کہا کہ ہم نے کووِڈ19 کے دوران جس طرح سے صورتحال سے نمٹا اس کی بین الاقوامی تنظیموں نے بھی تعریف کی۔

عمران خا نے رائے دی کہ بروقت انتخابات ملک کو اس “معاشی بحران” سے بچا سکتے جس کا اسے آج سامنا ہے۔ 

 انہوں نے الیکشن کمیشن آف پاکستان کو الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں کی مخالفت پر بھی آڑے ہاتھوں لیا۔

یہ بھی پڑھیں | آئی ایم ایف کے مطالبے پر پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ متوقع

یہ بھی پڑھیں | بجلی 3.5 فی یونٹ کے حساب سے ایک بار پھر مہنگی کر دی گئی 

انہوں نے کہا کہ الیکٹرانک ووٹنگ مشینیں (ای وی ایم) بدعنوانی کے بے شمار طریقوں کو روک سکتی تھیں لیکن اس کی مخالفت کی گئی۔ 

پی ٹی آئی رہنما نے دعویٰ کیا کہ پاکستان کے لیے موجودہ صورتحال سے نکلنے کا ایک ہی راستہ ہے اور وہ ہے ملک میں نئے عام انتخابات کو یقینی بنانا۔ 

سپریم کورٹ کے فیصلے پر تبصرہ کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ حمزہ شہباز کو غیر قانونی طور پر صوبے کا وزیراعلیٰ بنایا گیا۔

عدالت نے صرف ایک سوال کیا اور وہ یہ تھا کہ کیا پارٹی سربراہ یا پارلیمانی کمیٹی فیصلے کرتی ہے۔

عمران خان نے افسوس کا اظہار کیا کہ “چور” پھر عدالت کی مخالفت کے لیے متحد ہو گئے۔ پی ٹی آئی کے سربراہ نے فیصلے کو پاناما پیپرز کے فیصلے سے تشبیہ دیتے ہوئے کہا کہ پہلے بھی مسلم لیگ (ن) سے کہا گیا تھا کہ وہ اپنی دولت کے ذرائع کے بارے میں جواب دیں۔ 

 انہوں نے مزید کہا کہ وہ خود کو قانون سے بالاتر سمجھتے ہیں۔

 آج سے پہلے، سابق وزیر اعظم نے اپنے آفیشل ٹویٹر ہینڈل پر گزشتہ شام سپریم کورٹ کے فیصلے کی حمایت میں سامنے آنے پر قوم کا شکریہ ادا کیا، جس میں انہوں نے “آئین اور قانون” کو برقرار رکھنے کا دعویٰ کیا۔

 ان کا یہ اعلان شہباز شریف کی زیرقیادت حکمران اتحاد کو ہونے والے تباہ کن دھچکے کے بعد سامنے آیا ہے جب سپریم کورٹ نے پنجاب اسمبلی کے ڈپٹی سپیکر دوست محمد مزاری کے پنجاب کے وزیر اعلیٰ کے انتخاب کے فیصلے کو کالعدم قرار دے دیا ہے جس سے پی ٹی آئی کے منتخب چوہدری پرویز الٰہی وزیر اعلی بن گئے ہیں۔

حرمین رضا

حرمین رضا اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔