سیکورٹی فورسز نے بلوچستان میں دس دہشتگردوں کو ہلاک کر دیا

بدھ کو انٹر سروسز پبلک ریلیشنز (آئی ایس پی آر) کے ایک بیان میں کہا گیا کہ سیکیورٹی فورسز نے بلوچستان کے علاقے ہوشاب میں انٹیلی جنس پر مبنی آپریشن (آئی بی او) کے دوران 10 دہشت گردوں کو ہلاک کر دیا ہے۔

 فوج کے میڈیا ونگ نے ایک بیان میں کہا کہ انٹیلی جنس پر مبنی آپریشن کی کارروائی جنرل ہوشاب کے علاقے میں “بلوچستان میں 

 بیرونی حمایت یافتہ دشمنوں” کے کیمپ اور ٹھکانے پر کی گئی۔ 

جب فوجیوں نے علاقے کو گھیرے میں لینا شروع کیا تو دہشت گردوں نے اپنے ٹھکانے سے بھاگنے کی کوشش کی اور اندھا دھند فائرنگ کردی۔ جس کے نتیجے میں شدید فائرنگ کا تبادلہ ہوا۔

یہ بھی پڑھیں | پاکستان نئی ٹیکنالوجی کو اپنا کر ایک بلین ڈالر بچا سکتا ہے  

جس کے نتیجے میں دہشت گرد کمانڈر ماسٹر آصف عرف مکیش سمیت 10 دہشت گرد مارے گئے۔ 

 آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ مارے گئے دہشت گرد تربت اور پسنی کے علاقوں میں حالیہ فائرنگ اور سیکیورٹی فورسز پر حملوں میں ملوث تھے۔ 

 اس کے علاوہ بھاری مقدار میں اسلحہ اور گولہ بارود بھی برآمد ہوا، جسے سیکورٹی فورسز کے خلاف استعمال کرنے کا منصوبہ بنایا گیا تھا۔ 

 آئی ایس پی آر نے مزید کہا کہ دہشت گردی کی کارروائیوں کے مرتکب افراد کے خاتمے کے لیے آپریشن جاری رہے گا اور انہیں بلوچستان کے امن، استحکام اور ترقی کو سبوتاژ کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

ہمارا نیوز لیٹر جوائن کریں
تازہ ترین آرٹیکلز، نوکریوں اور تفریحی خبریں ڈائریکٹ اپنے انباکس میں حاصل کریں
یہاں ایک لاکھ ستر ہزار سبسکرائبرز ہیں