سعودی عرب کی جانب سے دنیا بھر سے ساٹھ ہزار لوگوں کو حج 2021 کے لئے اجازت

وزیر مذہبی ہم آہنگی اور وزیر اعظم کے  نمائندہ خصوصی مولانا طاہر اشرفی نے بتایا کہ سعودی عرب نے اس سال پاکستان سمیت دنیا بھر سے 60 ہزار افراد کو حج کی اجازت دی ہے۔

تفصیلات کے مطابق ہفتہ کی شب نجی ٹی وی کو انٹرویو دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ حکومت سعودی حکام سے بات چیت کررہی ہے کہ اس سال پاکستان سے آنے والے افراد کی تعداد کے بارے میں ہے۔ 

طاہر اشرفی نے کہا ہے کہ 18 سال سے کم عمر افراد اور 60 سال سے زیادہ عمر کے افراد حج کے اہل نہیں ہوں گے۔

 انہوں نے مزید کہا کہ زیارت کے لئے جانے والے افراد کو تین دن کے لئے قرنطینہ ہونا پڑے گا۔ انہوں نے نشاندہی کی کہ کورونا وائرس کی ویکسین لگوانا بھی لازمی ہے۔ 

وزیر مذہبی امور نورالحق قادری نے کہا ہے کہ حکومت سعودی وزارت صحت سے بات کر رہی ہے تاکہ وہ چینی ویکسین کے ٹیکے لگائے جانے والے لوگوں کی اجازت دے سکیں۔ انہوں نے کہا کہ عالمی ادارہ صحت نے بھی اس ویکسین کو قبول اور منظور کرلیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں | پاکستان جنرل اسمبلی اقوام متحدہ میں فلسطین کا مسئلہ اٹھائے گا    

 اس سے قبل سعودی عرب نے کہا تھا کہ وہ ایسے لوگوں کو اجازت نہیں نہیں دے گا جنہیں چینی ویکسین لگی ہے وہ ملک میں داخل نہیں ہوسکتے ہیں۔ 

یاد رہے کہ پچھلے سال سعودی عرب نے اپنے ملک کے علاوہ دیگر ممالک سے کسی کو حج کی اجازت نہیں دی تھی۔

 صرف سعودی عرب کے دس ہزار مسلمانوں کو ہی حج کرنے کی اجازت دی گئی تھی۔

 گذشتہ اکتوبر میں کورونا وائرس کی وجہ سے حج پر پابندی عائد کرنے کے بعد ، سعودی عرب نے سات ماہ میں پہلی بار نماز کے لئے مسجد نبوی کو کھولا تھا اور جزوی طور پر عمرہ زیارت کا دوبارہ آغاز کیا۔

جاویریہ حارث

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

سبسکرائب
کو مطلع کریں
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments
0
آپ اس متعلق کیا کہتے ہیں؟ اپنی رائے کمنٹ کریںx
()
x