جامعہ کراچی: خودکش حملہ آور کی ایک اور ویڈیو سامنے آ گئی

کراچی یونیورسٹی میں خود کو دھماکے سے اڑانے والی خاتون خودکش بمبار کی ایک اور ویڈیو منظر عام پر آگئی ہے۔ ویڈیو شاہراہ فیصل پر واقع مقامی ہوٹل کی ہے۔ 

خاتون مبینہ طور پر آخری بار اپنے شوہر سے ملنے ہوٹل گئی تھی۔ ویڈیو میں خاتون خودکش بمبار کو دو بچوں کے ساتھ دکھایا گیا ہے۔ عورت کے کندھے پر ایک سیاہ بیگ بھی لٹکا ہوا تھا۔ اس کے ہاتھ میں ایک بڑا شاپنگ بیگ بھی دیکھا جا سکتا ہے۔

 ہوٹل کے ریکارڈ کے مطابق انٹری رجسٹر میں ان کے شوہر اور افتخار نامی شخص کے نام پائے گئے۔ دوسری جانب ذرائع کا کہنا ہے کہ سی ٹی ڈی اور قانون نافذ کرنے والے اداروں نے شہر میں خودکش حملہ آور کی تین رہائش گاہوں کا دوبارہ دورہ کیا ہے۔

اس موقع پر فرانزک ماہرین بھی موجود تھے اور انہوں نے رہائش گاہوں سے اہم شواہد اکٹھے کئے۔ ذرائع کا دعویٰ ہے کہ فرانزک ماہرین کی ٹیم نے دھماکہ خیز مواد کی موجودگی اور بم کی تیاری کے حوالے سے اہم شواہد اکٹھے کر لیے ہیں۔ 

یاد رہے کہ چھبیس اپریل 2021 منگل کو، کراچی یونیورسٹی کے اندر چینی زبان کے مرکز کے باہر ایک خاتون خودکش بمبار کے حملے میں چار افراد – تین چینی شہری اور ایک پاکستانی مرد – ہلاک ہو گئے تھے۔

یہ بھی پڑھیں | شہباز گل کی گاڑی کو ٹکر لگانے والا شخص گرفتار

کراچی پولیس کے سربراہ غلام نبی میمن نے جائے وقوعہ پر میڈیا کو بتایا کہ یونیورسٹی کے اساتذہ کو لے جانے والی وین کو پھٹنے والے دھماکے میں ایک چینی شہری اور رینجرز اہلکاروں سمیت چار دیگر افراد زخمی بھی ہوئے۔ 

 کاؤنٹر ٹیررازم ڈیپارٹمنٹ کے سربراہ راجہ عمر خطاب نے اس وقت تصدیق کی کہ یہ کنفیوشس انسٹی ٹیوٹ کے باہر ایک طالبہ کی طرف سے خودکش حملہ تھا۔ حملہ آور ایم فل کا طالب علم تھا، جس نے رات 12:10 بجے ٹویٹر پر اپنے دوستوں کو الوداع کہا تھا۔ 

حملہ آور نے کنفیوشس انسٹی ٹیوٹ کے گیٹ کے قریب خود کو دھماکے سے اڑا لیا جہاں ایک سفید ہائی ایس وین، جو چینی شہریوں کو لے کر جا رہی تھی، جو انسٹی ٹیوٹ کی فیکلٹی کا حصہ تھے، اس کے پاس آئی۔

 دھماکے کے بعد آگ نے وین کو اپنی لپیٹ میں لے لیا جس سے مسافروں کو اس سے باہر نکلنے کا کوئی موقع نہیں ملا۔ 

 بم ڈسپوزل سکواڈ (بی ڈی ایس) کا کہنا ہے کہ حملے میں تین سے چار کلو گرام بارودی مواد استعمال کیا گیا۔ حکام کے مطابق زور دار دھماکے سے یونیورسٹی کے مختلف شعبہ جات کی کھڑکیاں اور دروازے ٹوٹ گئے۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

ہمارا نیوز لیٹر جوائن کریں
تازہ ترین آرٹیکلز، نوکریوں اور تفریحی خبریں ڈائریکٹ اپنے انباکس میں حاصل کریں
یہاں ایک لاکھ ستر ہزار سبسکرائبرز ہیں