اقوام متحدہ غذائیت اجلاس: پاکستان کی شرکت کا طریقہ کار غیر واضح

اقوام متحدہ کی فوڈ سیکیورٹی میٹنگ  اگلے ہفتے شروع ہو رہی ہے اور پاکستان کو بھی دعوت دی گئی ہے لیکن ابھی تک یہ واضح نہیں ہے کہ آیا وزیر خارجہ بلاول بھٹو زرداری اس اجلاس میں فزیکل طور پر شرکت کریں گے یا آن لائن اجلاس میں شریک ہوں گے۔

 سفارتی زرائع نے بتایا کہ ں کے پاس دونوں ہی آپشنز ہیں کہ وہ میٹنگ کے لیے نیویارک جائیں یا اسلام آباد سے آن لائن خطاب کریں۔

 اسلام آباد میں دفتر خارجہ کے ایک ذریعے نے بتایا کہ امکان ہے کہ وزیر خارجہ ایک یا دو روز میں اپنی شرکت کے بارے میں فیصلہ کریں گے۔ اس دوران، بلاول بھٹو زرداری اور ان کے قریبی ساتھی اس معاملے پر مشاورت کر رہے ہیں۔

اس دوران وزیر خارجہ کے متوقع امریکی دورے پر اسلام آباد میں شدید قیاس آرائیاں جاری ہیں۔ مسلم لیگ ن کی زیر قیادت حکومت کے ایک سینئر رکن نے اسلام آباد میں صحافیوں کو بتایا کہ بلاول بھٹو زرداری کے نیویارک جانے کے امکانات بہت زیادہ ہیں۔

یہ بھی پڑھیں | فیشن سٹائل کی 3 اقسام: جانئے کپڑوں کے ٹرینڈ سے متعلق معلومات

 لیکن ایک سینئر سفارتی ذریعہ اس کے برعکس سوچتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگرچہ اس دورے کو ممکن بنانے کے لیے کوششیں جاری ہیں لیکن امکانات بہت کم ہیں۔ وجہ پوچھنے پر سفارت کار نے کہا کہ ایک غور طلب بات ملک کا موجودہ سیاسی ماحول ہے۔ 

 گزشتہ ہفتے، امریکی وزیر خارجہ انٹونی بلنکن نے وزیر خارجہ کو فون کیا اور انہیں 18 مئی کو نیویارک میں اقوام متحدہ کے ہیڈ کوارٹر میں فوڈ سیکیورٹی میٹنگ میں مدعو کیا۔ 

 نیویارک اور واشنگٹن دونوں میں پاکستانی سفارت کاروں نے اشارہ دیا ہے کہ بلاول بھٹو زرداری اجلاس میں شرکت کے لئے نیویارک جائیں گے کیونکہ اس سے دونوں رہنماؤں کو  براہ راست بات چیت کا موقع فراہم ملے گا۔ انہوں نے بلاول بھٹو زرداری کو سیکرٹری بلنکن کے ساتھ علیحدہ ملاقات کے لیے واشنگٹن لانے کا بھی اشارہ کیا۔ 

 سفارت کاروں میں سے ایک نے کہا کہ جسمانی موجودگی بالکل مختلف پیغام بھیجتی ہے۔ اس سے دونوں ممالک کے درمیان براہ راست، اعلیٰ سطحی بات چیت کے مواقع  پیدا ہوتے ہیں۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

ہمارا نیوز لیٹر جوائن کریں
تازہ ترین آرٹیکلز، نوکریوں اور تفریحی خبریں ڈائریکٹ اپنے انباکس میں حاصل کریں
یہاں ایک لاکھ ستر ہزار سبسکرائبرز ہیں