آل کراچی تاجر اتحاد کا وزیر اعلی سندھ کے گھر کے سامنے دھرنے کا اعلان

شہر میں امن و امان کی بگڑتی ہوئی صورتحال کے بعد آل کراچی تاجر اتحاد (اے کے ٹی آئی) نے بدھ کو 8 مارچ کو سندھ کے وزیراعلیٰ ہاؤس کے باہر دھرنا دینے کا اعلان کیا ہے۔ 

 چیئرمین آل کراچی تاجر اتحاد عتیق میر نے کہا ہے کہ سندھ حکومت عوام کی جان و مال کے تحفظ میں ناکام ہو چکی ہے۔ دھرنے کے پروگرام کی تفصیلات بتاتے ہوئے انہوں نے کہا کہ شہر بھر سے احتجاجی ریلیاں وزیراعلیٰ ہاؤس کے باہر دھرنا دیں گی۔ 

یہ بھی پڑھیں | پیپلرز پارٹی کا حکومت مخالف لانگ مارچ شروع ہو گیا  

عتیر میر نے کہا کہ حکومت کو کراچی شہر کی تاجر برادری کو تحفظ فراہم کرنا چاہیے کیونکہ اسٹریٹ کرائمز بڑھ رہے ہیں۔ 

عتیق میر نے متنبہ کیا کہ اگر تاجر برادری کو کاروبار دوست ماحول فراہم نہ کیا گیا تو وہ ٹیکس ادا نہیں کریں گے۔ 

اس سے قبل لانڈھی میں ڈکیتی کی واردات کے دوران کالج جانے والے طالب علم عثمان کو ڈاکوؤں نے فائرنگ کر کے قتل کر دیا تھا۔

 عثمان کے دوست نے بتایا تھا کہ وہ کالج کے لیے تیار ہو رہا تھا کہ آگ کی آواز سن کر وہ گھر کے گیٹ پر پہنچا اور عثمان کو وہاں پڑا دیکھا۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

ہمارا نیوز لیٹر جوائن کریں
تازہ ترین آرٹیکلز، نوکریوں اور تفریحی خبریں ڈائریکٹ اپنے انباکس میں حاصل کریں
یہاں ایک لاکھ ستر ہزار سبسکرائبرز ہیں