یک طرفہ ٹریفک کی خلاف ورزی پر مقدمات درج کیے جائیں گے

ون وے ٹریفک کی خلاف ورزی پر مقدمات

جمعہ سے لاہور میں ون وے ٹریفک کی خلاف ورزی پر بھی مقدمات درج کیے جائیں گے۔ یہ مقدمے غفلت اور لاپرواہی سے گاڑی چلانے کی دفعات کے تحت کیے جائیں گے۔ 

ان خیالات کا اظہار سی ٹی او لاہور ڈاکٹر اسد ملہی نے لبرٹی چوک میں میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ رواں سال ون وے ٹریفک کی خلاف ورزی پر 2 لاکھ 25 ہزار سے زائد چالان کیے گئے ہیں۔ بھاری چالان کے باوجود شہریوں کی بڑی تعداد ون وے ٹریفک کی خلاف ورزی سے گریز نہیں کرتی ہے جس کی وجہ سے ٹریفک حادثات میں روز بروز اضافہ ہو رہا ہے جو کہ انتہائی تشویشناک ہے۔ 

لاہور شہر کو حادثات سے مکمل طور پر محفوظ بنایا جائے گا

انہوں نے کہا کہ لاہور شہر کو حادثات سے مکمل طور پر محفوظ بنایا جائے گا۔ ڈاکٹر اسد ملہی کا مزید کہنا تھا کہ مقدمات پاکستان پینل کوڈ کی دفعہ 279 کے تحت درج کیے جائیں گے۔ 

انہوں نے کہا کہ خلاف ورزی کرنے والے اپنی اور دوسروں کی زندگیوں کو خطرے میں ڈالتے ہیں۔ یک طرفہ ٹریفک کی خلاف ورزی بھی ٹریفک میں خلل کا باعث بنتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں | حکومت نے سخت فیصلوں کے ذریعے ڈیفالٹ کے خطرے کو ٹال دیا: وزیراعظم

یہ بھی پڑھیں | فلسطینیوں سے اظہار یکجہتی کا عالمی دن: جانئے اہم معلومات

یک طرفہ ٹریفک کی خلاف ورزی

 انہوں نے کہا کہ یک طرفہ ٹریفک کی خلاف ورزی پر 2000 روپے کا چالان جاری کیا جا رہا ہے۔ 

علاوہ ازیں سی ٹی او لاہور نے کہا کہ 05 دسمبر بروز پیر سے کسی بھی بھاری گاڑی کو فٹنس سرٹیفکیٹ کے بغیر شہر میں داخلے کی اجازت نہیں ہوگی۔ رات کو چلنے والی بھاری گاڑیاں سموگ کا باعث بن رہی ہیں۔ ریت اور مٹی کی گاڑیوں کو بغیر ترپال کے شہر میں داخل ہونے کی اجازت نہیں ہوگی۔ 

صرف فٹنس گاڑیوں کو داخلے کی اجازت ہوگی

 ڈاکٹر اسد ملہی نے مزید کہا کہ مکمل حفاظتی اقدامات اپنانے کے بعد صرف فٹنس گاڑیوں کو داخلے کی اجازت ہوگی۔ لبرٹی مارکیٹ میں بغیر ہیلمٹ کے موٹرسائیکل سواروں میں ہیلمٹ بھی تقسیم کیے گئے تاکہ تحفظ اور تحفظ کا احساس پیدا کیا جا سکے۔

حرمین رضا

حرمین رضا اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔