ہمت ہے تو گورنر راج لگا کر دکھاؤ، بلاول بھٹو کی وزیر اعظم کو دھمکی

وزیر داخلہ شیخ رشید کی اشتعال انگیز تجویز کے فوری جواب میں پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ وفاقی حکومت میں ہمت ہے تو سندھ میں گورنر راج لگا کر دکھائے۔ انہوں نے اس کے بعد سنگین نتائج سے بھی خبردار کیا ہے۔

 جمعہ کو ایک ٹویٹ میں پی پی پی کے سربراہ نے کہا کہ اگر آپ میں ہمت ہے تو گورنر راج لگا دیں۔ عمران خان! اس میں تاخیر نہ کریں، آج ہی اسے مسلط کریں، انشا اللہ ہم سب اسلام آباد آئیں گے اور جواب دیں گے۔

 گورنر سندھ عمران اسماعیل نے کہا کہ اگر وزیر اعظم عمران نے انہیں صوبے میں گورنر راج لگانے کی ہدایت کی تو وہ ایک سیکنڈ کے لیے بھی نہیں ہچکچائیں گے۔ 

 کراچی میں ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ آنے والی نسلیں یاد رکھیں گی کہ آج ملک میں کیا ہو رہا ہے۔ میری کل وزیراعظم سے ملاقات ہے، ہم انہیں (اپوزیشن) کو ایسا سرپرائز دیں گے جو سب کو یاد رہے گا۔ 

گورنر نے کہا کہ جن اسمبلی ممبران کا ضمیر جاگ چکا ہے وہ قانون کے مطابق اپنا فیصلہ کریں۔ انہوں نے الیکشن کمیشن آف پاکستان سے اس صورتحال کا نوٹس لینے پر زور دیا۔

 مخالف قانون سازوں نے عمران خان کے نام ووٹ لئے ہیں۔ ای سی پی وزیراعظم کو سوات جانے سے روکنے کے بجائے ان کے خلاف کارروائی کرے۔ 

یہ بھی پڑھیں | پی ٹی آئی ورکرز کا سندھ ہاؤس پر دھاوا، منحرف ارکان کے خلاف شدید احتجاج 

وفاقی وزیر برائے بحری امور علی حیدر زیدی نے ٹویٹر پر کہا کہ اگر کسی نے سندھ میں پی ٹی آئی کے کسی رکن پارلیمنٹ کو نقصان پہنچانے یا ان کے گھروں پر حملہ کرنے کی کوشش کی تو ہم براہ راست آصف علی زرداری، بلاول اور مراد علی شاہ کو کسی بھی  نقصان کا ذمہ دار ٹھہرائیں گے۔ 

انہوں نے مزید لکھا کہ وفاقی حکومت نے تحمل کا مظاہرہ کیا ہے۔ بدتمیز بچوں کی طرح کام نہ کریں۔

 یاد رہے کہ جمعرات کو شیخ رشید نے وزیر اعظم عمران کو پی ٹی آئی کے قانون سازوں کی جانب سے عدم اعتماد کے ووٹ سے قبل  سندھ ہاؤس میں پناہ لینے کے بعد صوبہ سندھ میں گورنر راج نافذ کرنے کا مشورہ دیا تھا۔

  وفاقی دارالحکومت سے سندھ ہاؤس میں پناہ لینے والے کئی اراکین نے مختلف اینکر پرسنز کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ وہ حکمران جماعت سے الگ ہو چکے ہیں اور آئندہ الیکشن پی ٹی آئی کے ٹکٹ پر نہیں لڑیں گے۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

ہمارا نیوز لیٹر جوائن کریں
تازہ ترین آرٹیکلز، نوکریوں اور تفریحی خبریں ڈائریکٹ اپنے انباکس میں حاصل کریں
یہاں ایک لاکھ ستر ہزار سبسکرائبرز ہیں