مصنف کے بارے میں

صفحۂ اول

ہرشیل کشمیر پریمئیر لیگ کے لئے آج پاکستان آئیں گے

جنوبی افریقہ کے سابق بلے باز ہرشل گبز کشمیر پریمیئر لیگ (کے پی ایل) میں کھیلنے کے لیے تیار ہیں۔

تفصیلات کے مطابق سابق کرکٹر کے آج پاکستان آنے کی توقع ہے۔ ٹوئٹر پر ہرشل گبز نے ٹویٹ کیا کہ وہ پاکستان کے لیے روانہ ہو چکے ہیں۔

 انہوں نے جہاز کے اندر سے اپنی تصویر پوسٹ کی اور کہا کہ 2 اگست کو صدر کشمیر پریمیئر لیگ (کے پی ایل) عارف ملک نے اعلان کیا تھا کہ بھارتی بورڈ کی دھمکیوں کے باوجود وہ پاکستان آئیں گے۔ 

یہ بھی پڑھیں | بیوی کے مقابلے میں حسین کی حالت زیادہ ہونی چاہیے ، صداف کنول کے بیان پر مختلف تبصرے

برشیل جو 47 سالہ کرکٹر ہیں، انہوں نے بورڈ آف کنٹرول فار کرکٹ ان انڈیا (بی سی سی آئی) کی سازشوں کو اس وقت بے نقاب کیا جب بھارت نے کے پی ایل کے انعقاد میں رکاوٹیں کھڑی کیں۔ انہوں نے سوشل میڈیا پر کہا تھا کہ بی سی سی آئی پاکستان کے ساتھ سیاسی ایجنڈا لا رہا ہے اور مجھے کے پی ایل میں کھیلنے سے روکنے کی کوشش کر رہا ہے۔ 

انہوں نے انکشاف کیا کہ انہیں بورڈ کی طرف سے دھمکی دی جا رہی تھی کہ انہیں کرکٹ سے متعلق کام کے لیے بھارت میں آنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔ انہوان نے ٹویٹر پر لکھا کہ بی سی سی آئی کی پاکستان کے ساتھ غیر جانبدار ہے اور مجھے کشمیر پریمئیر لیگ میں کھیلنے سے روکنے کی کوشش کر رہا ہے۔ مجھے دھمکی دی جا رہی ہے کہ وہ مجھے کرکٹ سے متعلقہ کسی بھی کام کے لیے انڈیا میں داخلے کی اجازت نہیں دیں گے۔ 

یاد رہے کہ پی سی بی کے ذریعہ منظور شدہ ، کے پی ایل ایک ٹی 20 فارمیٹ ، میگا کرکٹ ایونٹ ہے جس کا مقصد عالمی سطح پر کشمیر کی اہمیت اور صلاحیتوں کو فروغ دینا ہے۔ ٹورنامنٹ میں چھ ٹیمیں حصہ لے رہی ہیں ، یعنی باغ اسٹالینز ، میرپور رائلز ، اوورسیز واریئرز ، مظفر آباد ٹائیگرز ، راولاکوٹ ہاکس اور کوٹلی لائنز۔ 

یہ تمام میچز مظفر آباد کرکٹ اسٹیڈیم میں ہوں گے۔ 

 دریں اثنا ، کے پی ایل انتظامیہ نے 6 اگست سے شروع ہونے والے ٹورنامنٹ کا شیڈول جاری کر دیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق پہلا میچ راولاکوٹ ہاکس اور کوٹلی لائنز کے درمیان کھیلا جائے گا جبکہ باغ سٹالینز اور کوٹلی لائنز 7 اگست کو کھیلیں گے۔ کے پی ایل کا پہلا کوالیفائر میچ 14 اگست کو کھیلا جائے گا جبکہ ٹورنامنٹ کا فائنل میچ 17 تاریخ کو کھیلا جائے گا۔ تمام میچز ڈے اینڈ نائٹ فکسچر ہیں اور جیو سپر لائیو پر نشر کیے جائیں گے۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔