کیا کوویڈ19 ویکسن لگوانے کے بعد بھی کوویڈ19 ٹیسٹ کروانے کی ضرورت ہے؟

اگر آپ نے کوویڈ19 ویکسن لگوا لی ہے تو کیا آپ کو کوویڈ19 ٹیسٹ کروانے کی ضرورت ہے؟ نہیں ، آپ کو معمول کی ٹیسٹنگ سے استثنی حاصل ہے۔

 بیماریوں پر قابو پانے اور روک تھام کے لئے امریکی مراکز کی تازہ ترین رہنمائی کے مطابق اگر آپ نے مکمل طور پر ویکسین لگا لی ہے تو آپ کو ٹیسٹ کروانے یا قرنطینہ ہونت کی ضرورت نہیں ہے چاہے آپ کسی ایسے مریض کے ساتھ بھی تھے جو کوویڈ19 کا مریض تھا۔

 ہاں اگر آپ میں کوویڈ19 علامات جیسے بخار ، کھانسی کا اظہار ہوتا ہے تو پھر ٹیسٹ کروانا چاہیے۔

 تازہ ترین کے مطابق ویکسین والے لوگوں کو سنگین بیماری کا بہت کم خطرہ ہے۔ یہاں تک کہ اگر آپ کو کوئی انفیکشن ہوجاتا ہے تو آپ سے دوسروں تک پھیلانے کا امکان کم ہوگا اور اس کی علامتیں زیادہ ہلکی ہوں گی۔

یہ بھی پڑھیں | وزیر اعظم عمران خان کو بڑے دعوے کرنے کی عادت ہے، بلاول بھٹو

 اس کے نتیجے میں ، سی ڈی سی کا کہنا ہے کہ ٹیکے لگائے گئے لوگوں کو بھی معمول کے مطابق کام کی جگہ کی ٹیسٹنگ سے استثنی دیا جا سکتا ہے حالانکہ بہت سی کمپنیاں ملازمین کی ویکسی نیشن کی حیثیت کو نہیں مان رہی ہیں۔ 

کوویڈ19 پھیلنے کے زیادہ خطرہ کے پیش نظر، گھر، پناہ گاہوں یا جیلوں میں کام کرنے یا رہائش پذیر لوگوں کے لئے اسکریننگ کی سفارش کی جاتی ہے۔  

یاد رہے کہ یہ رہنمائی مختلف ممالک کے لحاظ سے مختلف ہوسکتی ہے۔ بیرون ملک سے واپس آنے والے امریکی شہریوں کو بھی ، ویکسن لگوانے کی حیثیت سے قطع نظر ، گھر جانے سے پہلے منفی کوویڈ 19 ٹیسٹ پیش کرنا ہوتا ہے۔ 

سی ڈی سی کا کہنا ہے کہ جو بھی شخص کوویڈ19 کا شکار ہوتا ہے اسے 10 دن کے لئے قرنطینہ ہونا چاہئے۔ 

 ماہرین کا کہنا ہے کہ بہت سے عام نزلہ اور وائرس کوویڈ19 کی طرح کی علامات کا سبب بن سکتے ہیں ، جس کی وجہ سے خزاں میں غیر ضروری ٹیسٹنگ کی ضرورت پیدا ہوسکتی ہے۔ 

جاویریہ حارث

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

سبسکرائب
کو مطلع کریں
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments
0
آپ اس متعلق کیا کہتے ہیں؟ اپنی رائے کمنٹ کریںx
()
x