مصنف کے بارے میں

صفحۂ اول

کراچی: منگھو پیر کے علاقے میں اسمارٹ لاک ڈاؤن لگا دیا گیا

سندھ حکومت کی جانب سے ایک بار کراچی کے سب ڈویژن منگھو پیر کے دو علاقوں میں منی لاک ڈاؤن نافذ کردیا گیا ہے جس کی وجہ کورونا وائرس کے کیسز میں پہلے کی نسبت کئی گناہ زیادہ اضافہ ہے۔

 ڈپٹی کمشنر کراچی ویسٹ کے دفتر کے جاری کردہ نوٹیفکیشن کے مطابق منگھو پیر کے دو علاقوں میں دو ہفتوں کے لئے منی اسمارٹ لاک ڈاؤن نافذ کردیا گیا ہے۔

نوٹیفکیشن کے مطابق ، منی سمارٹ لاک ڈاؤن کو یکم اکتوبر سے دو ہفتوں کے لئے نافذ کردیا گیا ہے۔ منگھو پیر کے گڈاپ ٹاؤن کے علاقوں میں صائمہ ولاز اور صائمہ سٹی شامل ہیں جبکہ دونوں کی مجموعی آبادی 4،000 کے قریب افراد پر مشتمل ہے۔ 

نوٹیفکیشن میں حکام سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ وہ علاقوں کو سیل کردیں اور ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر کراچی ویسٹ اور قانون نافذ کرنے والے اداروں (پولیس اور رینجرز) کے ساتھ معاونت کریں۔ نوٹیفکیشن میں لکھا ہے کہ محکمہ داخلہ کے حکم کی ہدایت کے تحت ایس او پیز کے رہنما خطوط کی خلاف ورزی کرنے والوں کو سزا دیں۔

منی اسمارٹ لاک ڈاؤن کے دوران مندرجہ ذیل ایس او پیز پر عمل درآمد کرنا لازمی ہو گا۔

لاک ڈاؤن والے علاقے میں داخل ہونے یا باہر جانے والے ہر شخص کو ماسک پہننا ہو گا

لاک ڈاؤن والے علاقے میں رہنے والے لوگوں کی نقل و حرکت پر سختی سے پابندی ہوگی

محکمہ داخلہ کے حکم کے مطابق مخصوص اوقات میں صرف گروسری کی دکانیں / سہولیات کی دکانیں اور فارمیسیوں کو ان علاقوں میں کھلا رہنے کی اجازت ہوگی جبکہ دیگر تمام کاروباری سرگرمیاں بغیر کسی استثنی کے سختی سے بند رہیں گے 

کسی بھی ریسٹورینٹ یا فاسٹ فوڈ ہوٹل سے کسی بھی طرح کی ہوم ڈیلیوری یا ٹیک اوے کی اجازت نہیں ہو گی 

قانون نافذ کرنے والے اداروں کو اصل شناختی کارڈ دکھا کرکے ہر گھر میں سے صرف ایک فرد کو باہر سے کھانے کی اشیاء اور دوائیں خریدنے کی اجازت ہوگی

صرف ایک حاضر ملازم کو ، جہاں انتہائی ضروری ہو ، کسی ایسے شخص کے ساتھ طبی نگہداشت کی اجازت ہوگی 

  گھروں میں کسی کو بھی مجمع لگانے کی اجازت نہیں ہوگی 

کسی خوشی میں سواری کی اجازت نہیں ہوگی ، مکانوں سے گھروں سے باہر آنے والے مکینوں کے پاس ایسا کرنے کی ایک معقول وجہ ہونی چاہئے 

ان علاقوں میں پائلین سواری پر سختی سے پابندی ہوگی 

تمام پبلک ٹرانسپورٹ (بسوں ، ٹیکسیوں ، رکشہوں ، اوبر ، کریم ، ایس ڈبلیو وی ایل ، ایئر لفٹ) پر ان علاقوں میں سڑکوں پر چلنے پر پابندی ہے۔ 

حکومت ان علاقوں میں موبائل ڈسپنسریوں اور موبائل یوٹیلیٹی اسٹورز کی فراہمی کے لئے ہر ممکن کوشش کرے گی

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔