چائنہ اور بھارت کے درمیان ہمالیائی سرحد پر جھگڑا، متعدد زخمی

نجی نیوز کے مطابق ہندوستانی اور چینی فوجیوں کے درمیان ہمالیائی سرحد نیا جھگڑا ہوا ہے جس میں دونوں فریقین کے متعدد فوجی زخمی ہوگئے ہیں۔ 

تفصیلات کے مطابق 20 جنوری کو ہونے والی یہ لڑائی چھ ماہ تک جاری رہنے والی اس لڑائی کے بعد ہوئی جس میں کم از کم 20 ہندوستانی فوجی ہلاک ہوئے۔ بھارت اور چائنہ دنیا کی دو سب سے زیادہ آبادی والی قومیں ہیں جو جغرافیائی اور سیاسی اختلافات کی وجہ سے متعدد بار آپس میں الجھ کر رہ گئی ہیں۔

یہ بھی پڑھیں | اقوام متحدہ نے پاکستان سے رجسٹر ائیرلائن پر سٹاف کو سفر کرنے سے منع کر دیا

ہندوستانی فوج کی جانب سے ایک مختصر بیان میں کہا گیا ہے کہ کشیدگی کو مقامی کمانڈروں نے قائم کردہ پروٹوکول کے مطابق حل کیا۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ ایک چینی گشت کو جبری طور پر واپس بھیجنے کی کوشش کرنے پر چار ہندوستانی فوجی زخمی ہوگئے۔

یاد رہے کہ پچھلے سال مئی میں نکو لا میں دونوں اطراف کے 150 فوجیوں کے مابین ایک دوسرے کے درمیان لڑائی سے دنیا کی دو انتہائی آباد قوموں کے مابین تازہ ترین سرحدی تناؤ ختم ہوگیا تھا۔ 

دونوں  طرف سے 10 کے قریب فوجی زخمی ہوئے اور اس کے بعد دوسرے واقعات کا ایک سلسلہ شروع ہوا۔ جون میں ، دونوں فریقوں کے فوجیوں نے لداخ کے علاقے کی وادی گلوان میں مٹھیوں اور لکڑی کے کلبوں کے ساتھ لڑائی کی جس میں درجنوں افراد ہلاک ہوئے۔ چین نے کبھی اس کی تصدیق نہیں کی کہ ان کے کتنے فوجیوں کی ہلاکت ہوئی ہے۔

 چائنہ اور ہندوستان ، جنہوں نے سن 1962 میں ایک سرحدی جنگ لڑی تھی ، نے بڑھتے ہوئے تناؤ پر ایک دوسرے پر شدید الزامات عائد کئے اور ہر ایک نے دسیوں ہزار اضافی فوج بارڈر زون میں ڈال دی۔ فوجی کمانڈروں کے مابین جدید ترین دفاعی مذاکرات اتوار کے روز ہوئے تھے لیکن ابھی تک اس بات کی کوئی علامت نہیں ملی ہے کہ کوئی بھی فریق پیچھے ہٹنے کو تیار ہے۔ 

ہندوستان کے وزیر خارجہ سبرامنیم جیشنکر نے گذشتہ ماہ کہا تھا کہ گذشتہ سال کے واقعات سے ہمسایہ ممالک کے مابین تعلقات نمایاں طور پر خراب ہوئے ہیں۔ بھارت بڑے پیمانے پر سرمایہ کاری سکیموں کے ذریعہ جنوبی ایشیاء میں اپنے سفارتی اقدامات کو بڑھانے کے چین کے اقدامات سے بھی محتاط ہے۔ حکومت نے تکنیکی کمپنیوں کے ذریعہ تیار کردہ 150 سے زائد چینی ایپس پر پابندی عائد کرتے ہوئے چینی کمپنیوں کو بھارت میں آرڈر لینے سے روکنے کی کوشش کی ہے۔ 

 چین نے بدلے میں متنبہ کیا ہے کہ ہندوستان اس تنازعہ سے معاشی طور پر نقصان اٹھائے گا۔

جاویریہ حارث

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

سبسکرائب
کو مطلع کریں
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments
0
آپ اس متعلق کیا کہتے ہیں؟ اپنی رائے کمنٹ کریںx
()
x