پیپلرز پارٹی کا حکومت مخالف لانگ مارچ شروع ہو گیا

پی پی پی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری اتوار کے روز تحریک انصاف کی وفاق میں حکومت گرانے کی کوششوں کے سلسلے میں کراچی سے پارٹی کے کارکنوں اور حامیوں کے ساتھ اسلام آباد کی طرف مارچ شروع کر دیا ہء جسے عوامی لانگ مارچ کا نام دیا گیا ہے۔

۔ ریلی کی روانگی سے قبل، پی پی پی چیئرمین نے مزار قائد کے قریب ایک بڑے اور چارج شدہ ہجوم سے خطاب کیا جس نے “گو سلیکٹڈ گو” کے نعرے کے ساتھ لانگ مارچ کا آغاز کیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ شہر کے لوگ پنڈال پر جمع ہیں اور پی ٹی آئی کی زیر قیادت “منتخب، ناجائز اور نااہل” حکومت کو گھر بھیجنے کے لیے وفاقی دارالحکومت کی طرف مارچ کرنے جا رہے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں | پاکستان نئی ٹیکنالوجی کو اپنا کر ایک بلین ڈالر بچا سکتا ہے  

انہوں نے ریلی کے شرکاء سے خطاب میں کہا کہ کراچی ایک ایسا شہر ہے جہاں ہر صوبے سے لوگ آتے ہیں اور ملک کی معیشت ان کے خون پسینے سے چلتی ہے۔ یہ لوگ وزیراعظم عمران خان کو گھر بھیجنے پر مجبور ہوئے ہیں کیونکہ اس ناجائز اور نااہل منتخب حکومت نے سندھ، بلوچستان، پنجاب اور خیبرپختونخوا کے عوام کے حقوق پر ڈاکہ ڈالا ہے۔

عمران خان نے آپ کے ووٹ اور روزی روٹی چھین لی ہے۔ اس کٹھ پتلی کو جانا ہے۔ پوری اپوزیشن نے عمران کو گھر بھیجنے کا فیصلہ کر لیا ہے اور پیپلز پارٹی کے جیالے اس تحریک میں سب سے آگے ہیں۔ اب انہیں کوئی طاقت نہیں روک سکتی۔

 بلاول بھٹو نے مزید کہا کہ ان کے دادا، پی پی پی کے بانی اور سابق وزیراعظم ذوالفقار علی بھٹو اور قائد عوام محمد علی جناح نے وعدہ کیا تھا کہ ملک میں پارلیمانی جمہوریت ہوگی۔ تاہم، اس حکومت نے ہماری جمہوریت پر حملہ کیا ہے۔ اس نے ہماری معیشت اور انسانی حقوق پر حملہ کیا ہے۔ ہم قائد عوام اور شہید محترمہ بے نظیر بھٹو کے مشن کو مکمل کریں گے اور 1973 کے آئین، عوام کے حقوق اور اس ملک کی معیشت کا دفاع کریں گے۔ 

بلاول بھٹو نے دعویٰ کیا کہ پیپلز پارٹی صرف وہ جماعت ہے جس نے ہمیشہ عوام کے حقوق کی بات کی اور تنخواہوں اور پنشن میں اضافہ کیا۔

 پیپلز پارٹی نے صوبوں کو حقوق دیے اور اپنے وسائل کا مالک بنایا۔ یہ کٹھ پتلی عمران خان 18ویں ترمیم اور این ایف سی [نیشنل فنانس کمیشن] ایوارڈ کو ختم کرنا چاہتا ہے۔ بلاول بھٹو نے مزید کہا کہ وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کراچی اور باقی صوبے کے عوام کی خدمت کرنے کی کوشش کر رہے ہیں اس حقیقت کے باوجود کہ وزیر اعظم عمران کی “کٹھ پتلی” حکومت نے صوبوں کو این ایف سی سے ان کا جائز حصہ فراہم نہیں کیا ہے۔

 اس حکومت نے پاکستان کو دنیا کے کرپٹ ترین ممالک میں شامل کر دیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل نے پی ٹی آئی حکومت کو تاریخ کی کرپٹ ترین حکومت قرار دے دیا ہے۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

ہمارا نیوز لیٹر جوائن کریں
تازہ ترین آرٹیکلز، نوکریوں اور تفریحی خبریں ڈائریکٹ اپنے انباکس میں حاصل کریں
یہاں ایک لاکھ ستر ہزار سبسکرائبرز ہیں