پچاس سال کے بعد بہترین کھانے عادت کون سی ہے؟ جانئے طبی حکماء سے

 پاکستان  پاکستان

جب آپ 50 سال کے ہو جاتے ہیں تو آپ میں خود میں کوئی صحت کی خرابی نا بھی ہو تو دائمی بیماری کی علامات خاندان اور جاننے والوں میں نظر آنا شروع ہو جاتی ہیں۔

اگر صحتمند خوراک نا لی جوئے تو  بیماریاں اپ کا پیچھا کرنا شروع کر دیتی ہیں۔

رجسٹرڈ غذائی ماہر غذائیت عیسیٰ کوجاوسکی نے اس متعلق خبردار کیا ہے۔  مثال کے طور پر، میٹابولک عوارض جیسے ہائی بلڈ پریشر، موٹاپا، پری ذیابیطس، اور ٹائپ 2 ذیابیطس کھانے کے طرز زندگی سے متعلق ہیں جو کھانے کے ناقص انتخاب کی وجہ سے ہوتے ہیں جو ٹشو کو نقصان پہنچانے والی دائمی سوزش کا سبب بنتے ہیں۔ 

 اگر آپ کی عمر 50 یا اس سے زیادہ ہے تو، آپ ان  صحت کے مسائل کو دور کرنے کے لیے کھانے کی بہترین عادت اپنا سکتے ہیں، ہر کھانے میں اپنی پلیٹ کو سوزش سے بچانے والے کھانوں سے بھرنا ہے۔

یہ بھی پڑھیں | بابر اعظم نے شادی اور سیلری سمیت دیگر اہم سوالات کے جوابات دے دئیے   

رنگین پھل اور سبزیاں پولیفینول اور اینٹی آکسیڈنٹس سے بھری ہوتی ہیں جو تباہ شدہ خلیوں کی مرمت اور بحالی کرتے ہیں۔

 پھل اور سبزیوں سے شٹر اسٹاک سوزش اچھی چیز ہو سکتی ہے۔ یہ مختلف حملہ آوروں جیسے پیتھوجینز کے خلاف مدافعتی نظام کا ردعمل ہے۔ لیکن یہ سوزش والی غذائیں جیسے پراسیسڈ فوڈز، تلی ہوئی غذائیں، سینکا ہوا سامان، سرخ گوشت کے ساتھ ساتھ تمباکو نوشی اور ضرورت سے زیادہ شراب پینے سے بھی متحرک ہوتا ہے۔

ماہر غذائیت عیسیٰ کوجاوسکی کے مطابق اگر آپ کی عمر 50 سال ہے تو آپ کو قدرتی پھل، سبزیوں اور غذائیت سے بھرہور دیگر غذاؤں میں اضافہ کر دینا چاہیے۔

حرمین رضا

حرمین رضا اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔