پولیس کا ن لیگی رہنما عطاء تاڑر کے گھر چھاپہ

عطا اللہ تارڑ کی رہائش گاہ پر چھاپہ

وزیر داخلہ ہاشم ڈوگر نے کہا کہ پولیس نے ہفتے کے روز وزیر اعظم کے معاون خصوصی عطا اللہ تارڑ کی لاہور کی رہائش گاہ پر چھاپہ مارا تاکہ “نوٹس” دیا جا سکے۔

 پولیس کے بیان کے مطابق مسلم لیگ ن کے رہنما اور سابق صوبائی وزیر عطا اللہ تارڑ چھاپے کے وقت وہاں موجود نہیں تھے۔ 

 چھاپے کے بعد عطاء اللہ تارڑ نے سوشل میڈیا پیغام میں وزیر داخلہ پنجاب کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ہاشم ڈوگر، میں مانتا تھا کہ آپ وزیر ہیں، لیکن آپ انتہائی غیر سنجیدہ کردار کے نکلے۔ 

“آپ پولیس کو اس گھر میں بھیج کر کیا ثابت کرنا چاہتے ہیں جہاں میں 15 سال پہلے رہتا تھا؟” 

اگر آپ کا یہ حال ہے تو آپ وزارت کو کیسے سنبھال رہے ہیں؟

یہ بھی پڑھیں | شہباز گل کیس: جسمانی ریمانڈ کی توسیع  کی منظوری نا مل سکی

یہ بھی پڑھیں | عمران خان کی پاکستانیوں کو تیرہ اگست کے پاور شو میں شرکت کی دعوت 

ایس اے پی ایم نے ڈوگر

 ایس اے پی ایم نے ڈوگر سے کہا کہ وہ اپنی پارٹی کے ملک دشمن بیانیہ کا دفاع کرنے میں حد سے تجاوز نہ کریں۔ 

عطا اللہ تارڑ کے ریمارکس کے جواب میں پنجاب کے وزیر داخلہ ہاشم ڈوگر نے ان پر زور دیا کہ “خود کو پیش کریں، قانون آپ کا انتظار کر رہا ہے۔” 

ہاشم ڈوگر کا کہنا تھا کہ پولیس نے آج لاہور میں عطا اللہ تارڑ کے گھر پر نوٹس جاری کیا ہے۔ 

واضح رہے کہ گزشتہ روز لاہور ہائیکورٹ نے پولیس کو مسلم لیگ ن کے رہنما عطا اللہ تارڑ، ملک احمد خان اور رانا مشہود کو ہراساں نہ کرنے کی ہدایت کی تھی۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔