پرویز الہی نے ایوان اقبال میں بجٹ سیشن کو غیر آئینی قرار دے دیا

پاکستان مسلم لیگ (ق) کے رہنما اور پنجاب اسمبلی کے سپیکر چودھری پرویز الٰہی نے اتوار کے روز ڈپٹی سپیکر کی موجودگی میں اسمبلی اجلاس کی صدارت نہ کرنے اور ایوان اقبال میں ہونے والے بجٹ سیشن کی کارروائی کو غیر آئینی قرار دیا ہے۔

 سابق گورنر پنجاب عمر سرفراز چیمہ سے ملاقات کے دوران پرویز الٰہی نے کہا کہ گورنر پنجاب بلیغ الرحمان نے بجٹ اجلاس پنجاب اسمبلی کے باہر بلانے کا آرڈیننس جاری کر کے آئینی خلاف ورزی کی ہے۔

یہ بھی پڑھیں | بجلی مزید 7.97 روپے مہنگی ہونے کا امکان

یہ بھی پڑھیں | وزیر اعظم شہباز شریف کا پیٹرول قیمتوں پر قوم کو اعتماد میں لینے کا فیصلہ 

جو لوگ ‘ووٹ کو عزت دو’ کے نعرے لگا رہے تھے انہوں نے جمہوری ادارے کو نقصان پہنچایا

پرویز الٰہی نے کہا کہ جو لوگ ‘ووٹ کو عزت دو’ کے نعرے لگا رہے تھے انہوں نے جمہوری ادارے کو نقصان پہنچایا۔ 

پنجاب اسمبلی کے سپیکر نے مزید کہا کہ پنجاب اسمبلی کے رولز آف پروسیجر 1997 کے رول 3 اور 4 کے تحت سیکرٹری پنجاب اسمبلی کو اجلاس بلانے اور ملتوی کرنے کے احکامات جاری کرنے ہوتے ہیں جبکہ کسی دوسرے شخص کو اجلاس ملتوی کرنے کا حق نہیں ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ڈپٹی سپیکر کی زیر صدارت بجٹ اجلاس غیر آئینی تھا۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

ہمارا نیوز لیٹر جوائن کریں
تازہ ترین آرٹیکلز، نوکریوں اور تفریحی خبریں ڈائریکٹ اپنے انباکس میں حاصل کریں
یہاں ایک لاکھ ستر ہزار سبسکرائبرز ہیں