مصنف کے بارے میں

صفحۂ اول

تبصرے

    پاکستان نے افغان امن کانفرنس کو ملتوی کر دیا

    پاکستان اور افغانستان کے مابین تازہ الزام تراشی کے بعد ، اسلام آباد میں 17 سے 19 جولائی تک منعقد ہونے والی افغان امن کانفرنس ملتوی کردی گئی ہے جس کی تصدیق جمعہ کو دفتر خارجہ نے کی ہے۔

     دفتر خارجہ نے بتایا کہ کانفرنس عیدالاضحی کے بعد تک ملتوی کردی گئی ہے۔ دفتر خارجہ نے بتایا کہ کانفرنس کی نئی تاریخوں کا اعلان بعد میں کیا جائے گا۔ 

    تفصیلات کے مطابق جمعہ کے روز دفتر خارجہ نے ایک دن قبل ہی افغان نائب صدر امراللہ صالح کی طرف سے دیئے گئے غیر ملکی دعوؤں کو یکسر مسترد کردیا تھا جنہوں نے پاکستان پر طالبان کو فضائی مدد فراہم کرنے کا الزام لگانے کے لئے ٹویٹر پیغام لکھا۔

    یہ بھی پڑھیں | علی شاہ نے اپنے لباس کی شرائط کا جواب دیا

     دفتر خارجہ نے واضح کیا کہ پاکستان نے کبھی بھی افغان فضائیہ کو کچھ نہیں بتایا۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس طرح کے بیانات سے افغان ملکیت اور قیادت میں حل کے لئے پاکستان کی مخلصانہ کوششوں کو نقصان پہنچتا ہے۔ 

    دفتر خارجہ نے مزید کہا کہ افغان فریق نے پاکستانی حکام کو اپنے علاقے میں فضائی کارروائی کرنے کے اپنے ارادوں کو آگاہ کیا جو پاکستان میں چمن سیکٹر کے برخلاف ہے۔ ہم خود مختار علاقے پر کارروائی کرنے کے لئے افغان حکومت کے حق کو تسلیم کرتے ہیں۔ 

    دفتر خارجہ نے یہ بھی واضح کیا کہ حال ہی میں ، پاکستان نے 40 افغان قومی اور دفاعی سیکیورٹی فورسز (اے آر ایس ایف) کو اے این ایس ایف کی ایک اعلان کردہ پیش کش کی وجہ سے درخواست کے مطابق تمام لاجسٹک سپورٹ فراہم کی۔

     پاکستان نے کہا ہے کہ وہ  افغانستان میں امن کے لئے پرعزم ہے۔ تمام فریقوں کے لئے یہ ضروری ہے کہ وہ افغانستان میں ایک جامع ، وسیع البنیاد اور جامع سیاسی تصفیہ کے لئے کام کریں۔ ص

     ڈائریکٹر جنرل انٹر سروسس انٹلیجنس (آئی ایس آئی) لیفٹیننٹ جنرل فیض حمید نے بھی جمعہ کے روز افغان صدر اشرف غنی کی طرف سے لگائے گئے الزامات کو مسترد کردیا۔ یاد رہے کہ ازبکستان کانفرنس میں افغان صدر نے پاکستان کے خلاف بے بنیاد الزامات لگاتے ہوئے کہا تھا کہ اس ملک سے 10،000 جنگجو افغانستان میں داخل ہوئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اگر مذاکرات ناکام ہوگئے تو ہم طالبان کا مقابلہ کریں گے۔ انہوں نے کہا تھا کہ یہ امن کا آخری موقع ہے۔

    جاویریہ حارث

    جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

    سبسکرائب
    کو مطلع کریں
    guest
    0 Comments
    Inline Feedbacks
    View all comments
    0
    آپ اس متعلق کیا کہتے ہیں؟ اپنی رائے کمنٹ کریںx
    ()
    x