مصنف کے بارے میں

صفحۂ اول

پاکستان اور چائنہ کی دوستی باہمی احترام پہ قائم ہے، عمران خان

   چین اور پاکستان کے وزرائے اعظم نے چین پاکستان اقتصادی راہداری پر جاری پیشرفت کی تعریف کرتے ہوئے کہا ہے کہ دوطرفہ مضبوط تعلقات دونوں ممالک کے عوام کے لئے فائدہ مند ثابت ہوں گے۔ 

جمعہ کو پاکستان اور چین کے مابین سفارتی تعلقات کے قیام کی 70 ویں سالگرہ منانے پر دونوں وزیر اعظم عمران خان اور چینی وزیر اعظم لی کیکیانگ نے ایک دوسرے کو مبارکباد پر مشتمل مراسلہ ارسال کیے ہیں۔ 

وزیر اعظم خان نے چینی وزیر اعظم کو لکھے اپنے خط میں کہا ہے کہ مجھے یقین ہے کہ آپ کی قیادت میں ہماری ‘آل ویدر اسٹریٹجک کوآپریٹو شراکت داری’ ہمارے عوام کے لئے ایک روشن اور امید افزا مستقبل پیدا کرنے میں مزید تقویت بخش ہوگی۔ 

لی حقیانگ نے اپنے خط میں کہا کہ حقائق پوری طرح سے ظاہر کرتے ہیں کہ چین اور پاکستان کے نئے دور میں مشترکہ مستقبل کے ساتھ ایک قریبی برادری کی تشکیل کے وسیع امکانات موجود ہیں ، اور یقینا ہمارے دونوں ممالک اور عوام کو زیادہ سے زیادہ فوائد حاصل کریں گے۔

 وزیر اعظم خان نے چین اور پاکستان کے مابین سفارتی تعلقات کے قیام کی 70 ویں سالگرہ کے موقع پر حکومت پاکستان اور عوام کی جانب سے مبارکبادیں دیں۔ 

انہوں نے کہا کہ 21 مئی 1951 ، جس دن ہمارے تعلقات باضابطہ طور پر قائم ہوئے تھے ، ہماری تاریخ کا ایک آب و ہوا کا لمحہ رہا ہے۔

 وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ ہمارے دو طرفہ افراد اور یکے بعد دیگرے قیادت اور حکومتوں نے ہمارے تعلقات کو فروغ دینے ، سیمنٹ بنانے اور مضبوط کرنے کے لئے ناقابل فراموش کوششیں کی ہیں۔

یہ بھی پڑھیں | پاکستان جنرل اسمبلی اقوام متحدہ میں فلسطین کا مسئلہ اٹھائے گا   

 انہوں نے کہا کہ وقت کا باہمی تعلقات باہمی احترام ، اعتماد اور افہام و تفہیم کی پائیدار اقدار کے آس پاس تعمیر ہوا ہے۔ 

انہوں نے کہا کہ دونوں حکومتیں اس سال کو مناسب انداز میں منانے کے لئے قریبی ہم آہنگی کر رہی ہیں تاکہ ہمارے عوام کو پاک چین تعلقات کی گہرائی ، وسعت اور جانفشانی کو صحیح معنوں میں سمجھنے میں مدد ملے گی۔ 

وزیراعظم عمران خان نے کوویڈ19 کے خلاف جنگ میں پاکستان کی حمایت کرنے پر چین کا شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے کہا کہ چین نے وبائی امراض پر قابو پانے کے لئے فراہم کردہ ویکسین اور آلات نے پاکستان میں قیمتی انسانی جانوں کو بچانے میں اہم کردار ادا کیا۔

 انہوں نے علاقائی اور عالمی سطح پر وبائی امراض کا مقابلہ کرنے کے لئے چین کی کوششوں میں پاکستان کی مستقل حمایت کا اعادہ کیا۔ 

وزیر اعظم نے ریمارکس دیئے کہ میری حکومت سی پیک منصوبوں کی تیزی سے تکمیل کے لئے پر عزم ہے جس سے خطے میں ترقی اور ترقی کے زبردست مواقع کھلیں گے۔

  چینی وزیر اعظم نے اعزازات میں توسیع کرتے ہوئے کہا کہ کوویڈ19 کے پیش نظر ، چین اور پاکستان نے ایک دوسرے کو مشکلات پر قابو پانے میں مدد دی ہے  اور منفی پس منظر کے خلاف چین پاکستان اقتصادی راہداری کی ترقی کے لئے نئی پیشرفت حاصل کی ہے۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔