مصنف کے بارے میں

صفحۂ اول

ویکسن لگوانے سے انکار کرنے والے سندھ گورنمنٹ ملازمین کو کوئی تنخواہ نہیں ملے گی

 وزیر اعلی سندھ مراد علی شاہ نے حکام کو ہدایت کی ہے کہ وہ ان سرکاری ملازمین کو تنخواہیں دینا بند کر دیں جو خود کو کورونا وائرس سے بچاؤ کی ویکسن نہیں لگوا رہے ہیں۔

 چیف منسٹر کی زیر صدارت کورونا وائرس ٹاسک فورس کے اجلاس کے دوران ، صوبے میں کورونا وائرس کی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا اور صوبے میں ویکسینیشن کے مجموعی اعدادوشمار کا بھی جائزہ لیا گیا۔

 وزیراعلیٰ مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ اگر ملازمین کرونا ویکسن نہیں لگواتے ہیں تو سندھ حکومت کے ملازمین کی تنخواہوں کو جاری نا کیا جائے اور اس سلسلے میں وزارت خزانہ کو ہدایت نامہ جاری کیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں | پاکستان جنرل اسمبلی اقوام متحدہ میں فلسطین کا مسئلہ اٹھائے گا      

 محکمہ صحت سندھ کے مطابق ، صوبے میں اب تک 1،550،553 افراد کو ویکسن لگایئ جا چکی ہے جبکہ 1،121،000 افراد کو پہلی خوراک ملی ہے اور 429،000 افراد کو کرونا وائرس کے خلاف مکمل طور پر ویکسین لگ چکی ہے۔

 اجلاس کو بتایا گیا کہ سندھ میں گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 78،799 افراد کو ویکسن لگائی گئی ہے۔ 

این سی او سی کے مطابق ، اب تک ملک بھر میں 79.53 ملین سے زائد افراد کو ویکسن لگائی جا چکی ہے۔ قومی کورونا وائرس مانیٹرنگ باڈی نے رواں سال ملک میں 70 ملین افراد کو ویکسن لگانے کا ہدف مقرر کیا ہے۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔