وزیر اعظم شہباز شریف ازبکستان پہنچ گئے

شہباز شریف ازبکستان پہنچ گئے

وزیر اعظم شہباز شریف دو روزہ دورے کے دوران جمعرات کو شنگھائی تعاون تنظیم (ایس سی او) کی کونسل آف ہیڈز آف سٹیٹ (سی ایچ ایس) کے سالانہ اجلاس میں شرکت کے لیے ازبکستان کے دارالحکومت سمرقند پہنچ گئے ہیں۔

 سی ایچ ایس، ایس سی او کا اعلیٰ ترین فورم ہے، جو تنظیم کی حکمت عملی، امکانات اور ترجیحات پر غور اور وضاحت کرتا ہے۔

 ازبکستان 15 سے 16 ستمبر کو ایس سی او سربراہی اجلاس کی میزبانی کرے گا جس میں وزیر اعظم ازبک صدر شوکت مرزیوئیف کی دعوت پر شرکت کریں گے۔ 

مختلف چیلنجز پر تبادلہ خیال ہو گا

 مرزییوئیف کی زیر صدارت اجلاس کے دوران اہم عالمی اور علاقائی مسائل بشمول موسمیاتی تبدیلی، فوڈ سیکیورٹی انرجی سیکیورٹی اور پائیدار سپلائی چینز پر تبادلہ خیال کیا جائے گا۔

 ایس سی او کے رہنما ایسے معاہدوں اور دستاویزات کی بھی منظوری دیں گے جو ایس سی او کے رکن ممالک کے درمیان تعاون کی مستقبل کی سمت کا تعین کریں گے۔

یہ بھی پڑھیں | وزیر اعظم شہباز شریف کل دو روزہ دورے پر ازبکستان جائیں گے 

یہ بھی پڑھیں | ہیومن ڈیویلپمنٹ انڈیکس میں پاکستان سات درجے نیچے آ گیا

 سربراہی اجلاس میں شرکت کے علاوہ، وزیر اعظم ریاستی سربراہان کی کونسل کے اجلاس کے موقع پر دیگر شریک رہنماؤں کے ساتھ دو طرفہ ملاقاتیں کریں گے۔ 

ایس سی او کے مختلف میکانزم میں پاکستان کی شرکت

سال 2017 میں ایس سی او کا مکمل رکن بننے کے بعد سے، پاکستان ایس سی او کے مختلف میکانزم میں اپنی شرکت کے ذریعے تنظیم کے بنیادی مقاصد کو آگے بڑھانے کے لیے سرگرم کردار ادا کر رہا ہے۔ 

مجموعی طور پر، ایس سی او کے رکن ممالک دنیا کی تقریباً نصف آبادی اور عالمی اقتصادی پیداوار کا ایک چوتھائی حصہ ہیں۔ 

شنگھائی تعاون تنظیم کا ایجنڈا

 وزیر اعظم کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے لہ امن و استحکام کو فروغ دینے اور اقتصادی، تجارتی اور ثقافتی شعبوں میں بہتر روابط کی تلاش کا شنگھائی تعاون تنظیم کا ایجنڈا اقتصادی رابطوں کو بڑھانے کے ساتھ ساتھ خطے میں امن و استحکام کے لیے پاکستان کے اپنے وژن سے ہم آہنگ ہے۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔