مصنف کے بارے میں

صفحۂ اول

وزیر اعظم، چیف آف آرمی سٹاف اور آئی ایس آئی چیف کا بھارت کی مسلسل خلاف ورزیوں پر نوٹس

ملک کی سول اور فوجی قیادت نے گزشتہ روز جمعرات کو  لائن آف کنٹرول کے ساتھ ہندوستانی فورسز کی طرف سے فائر بندی کی خلاف ورزیوں اور بار بار اشتعال انگیز اقدامات کا نوٹس لیتے ہوئے ملکی حمایت کے ساتھ ‘ہر قیمت پر’ مادر وطن کے دفاع کو یقینی بنانے کا عزم کیا۔ 

وزیر اعظم عمران خان اور چیف آف آرمی اسٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ نے پاک فوج اور بیرونی و داخلی سلامتی کی صورتحال سے متعلق پیشہ ورانہ امور پر مشتمل ایک اجلاس کے دوران ، وزیر اعظم نے ایک کنٹرول لائن کے ساتھ سیز فائر کی خلاف ورزیوں اور بھارتی فورسز کے بار بار اشتعال انگیز اقدامات پر تبادلہ خیال کیا۔ 

 ڈائریکٹر جنرل انٹر سروسز انٹلیجنس لیفٹیننٹ جنرل فیض حامد بھی اس میٹنگ میں موجود تھے۔ پریس ریلیز میں کہا گیا کہ یہ طے کیا گیا ہے کہ ہر قیمت پر پوری قوم کے تعاون سے مادر وطن کے دفاع کو یقینی بنایا جائے گا۔ 

یہ بھی پڑھیں | اسرائیلی منسٹر نے پاکستان کی اسرائیل کو تسلیم کرنے کی خبروں کی نفی کر د

انہوں نے بھارتی غیر قانونی مقبوضہ جموں و کشمیر میں انسانی حقوق کی مسلسل خلاف ورزی پر تشویش کا اظہار کیا۔

 اس سے قبل ہی دفتر خارجہ کے ترجمان نے اپنی ہفتہ وار پریس بریفنگ میں وزیر اعظم کو ایک بار پھر یہ واضح کرتے ہوئے کہا کہ اگر بھارت کو پاکستان کے خلاف کوئی غلط کاروائی کرنے کے لئے کافی حد تک لاپرواہی کرنا پڑتا ہے تو ، یہ ایک مضبوط پاکستانی قومی عزم کا مقابلہ کرے گء۔ اور خطرہ کے ہر سطح پر موزوں جواب دیا جائے۔ 

ترجمان نے عالمی برادری پر زور دیا کہ وہ بھارت کو کسی بھی غیر ذمہ دارانہ فعل کے خلاف صلاح دی جائے اور ایسی کسی بھی کارروائی سے باز رہے جس سے علاقائی امن و استحکام خطرے میں پڑ جائے۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔