متحدہ عرب امارات کا جہاز سیلاب زدگان کے لئے امداد لے کر پاکستان پہنچ گیا

وزیراعظم شہباز شریف کی اپیل

وزیراعظم شہباز شریف کی اپیل پر متحدہ عرب امارات (یو اے ای) کا جہاز سیلاب زدگان کے لیے امدادی سامان لے کر راولپنڈی،پاکستان کے نور خان ایئربیس پر پہنچ گیا ہے۔ امدادی سامان میں خیمے، کھانے پینے کی اشیاء، ادویات اور دیگر ضروری سامان شامل ہیں۔ 

پاکستان میں متحدہ عرب امارات کے سفیر اور وزیر منصوبہ بندی احسن اقبال نے ایئرپورٹ پر امدادی سامان کا استقبال کیا۔

 واضح رہے کہ متحدہ عرب امارات کے صدر شیخ محمد بن زید النہیان کی ہدایت پر آئندہ دنوں میں مزید 15 طیارے امدادی سامان لے کر پاکستان پہنچیں گے۔ 

 متحدہ عرب امارات کے صدر شیخ محمد بن زاید نے ہفتہ کو وزیر اعظم محمد شہباز شریف کو ٹیلی فون کیا اور پاکستان کے مختلف علاقوں میں طوفانی بارشوں اور اچانک سیلاب کے باعث قیمتی جانوں کے ضیاع پر دلی تعزیت کا اظہار کیا۔

 یہ بھی پڑھیں | سیلاب: آدھے گورنمنٹ سکول بند ہیں

 یہ بھی پڑھیں | سیلاب کی وجہ سے معیشت 10 بلین ڈالر تک متاثر ہوئی، مفتاح اسماعیل

 متحدہ عرب امارات کے صدر نے مشکل کی اس گھڑی میں پاکستانی عوام کے ساتھ مکمل یکجہتی کا اظہار کیا اور تمام زخمیوں کی جلد صحت یابی کی دعا کی۔

 انہوں نے اس قدرتی آفت سے نمٹنے کے لیے پاکستان کو ہر ممکن مدد کی پیشکش کی۔ اس تناظر میں، انہوں نے وزیراعظم کو آگاہ کیا کہ متحدہ عرب امارات فوری طور پر خیموں اور پناہ گاہوں کے سامان کے علاوہ کھانے پینے کی اشیاء کے ساتھ ساتھ طبی اور دواسازی کا سامان بھی بھیجے گا۔ 

مرنے والوں کی تعداد 1000 تک پہنچ گئی

 ملک کی نیشنل ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی (این ڈی ایم اے) کے اتوار کو جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق، جون سے اب تک پاکستان میں مون سون کے سیلاب سے مرنے والوں کی تعداد 1,033 تک پہنچ گئی ہے۔

 اس میں کہا گیا ہے کہ گزشتہ 24 گھنٹوں میں 119 لوگوں کی موت ہوئی ہے کیونکہ ملک کے مختلف حصوں میں شدید بارشوں کا سلسلہ جاری ہے۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔