قطر نواز شریف کو لندن میں اپنے علاج کے لئے تمام طبی اخراجات فراہم کرتا ہے.

لاہور ہائیکورٹ کے سابق وزیر اعظم نواز شریف کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ (ای سی ایل) سے ہٹانے کے فیصلے کے بعد ، ان کے لندن سفر کی تیاریوں کا آغاز کردیا گیا ہے ۔
مسلم لیگ (ن) کے ترجمان مریم اورنگزیب نے انکشاف کیا کہنوازشریف منگل کو قطر ایئر لائن کی ایک ایئر ایمبولینس کے ذریعے لندن روانہ ہوں گے۔ انہوں نے میڈیا کو بتایا کہ ڈاکٹروں نے آج صبح نوازشریف کی صحت کا معائنہ کیا ہے اور صحت کے خطرات کو کم کرکے انہیں خاص طور پر بلڈ شوگر لیول اور دل کی بیماریوں سے متعلق دوائیں فراہم کی جارہی ہیں۔

انہوں نے کہا ، “ڈاکٹرز محفوظ طبی طریقہ کار پر کام کر رہے ہیں تاکہ نواز شریف محفوظ طریقے سے سفر کرسکیں ان کے خون میں پلیٹلیٹ کی گنتی برقرار رکھنے کے ان کو اسٹیرائڈز کی زیادہ مقدار دی جارہی ہے۔”
سابق وزیر اعظم کو لینڈنگ کے فورا بعد ہی لندن کے ہارلے اسٹریٹ کلینک منتقل کردیا جائے گا۔
ائیر ایمبولینس آکسیجن سلنڈر ، وینٹیلیٹر ، آئی سی یو اور دیگر طبی سہولیات سے آراستہ ہوگی ، جب کہ شریف کے ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان سمیت دو ڈاکٹر اور پیرا میڈیکس بھی مسلم لیگ (ن) کے سپریمو کی مدد کریں گے۔
سول ایوی ایشن انتظامیہ نے بھی شریف کی روانگی کے لئے تیاریاں کرلی ہیں ، اور اس سلسلے میں ائیرپورٹ سیکیورٹی فورس (اے ایس ایف) ، کسٹمز ، انسداد منشیات فورس (اے این ایف) اور وفاقی تحقیقاتی ایجنسی (ایف آئی اے) امیگریشن ونگ کو آگاہ کردیا گیا ہے۔
مریم نے بتایا کہ تمام انتظامات مکمل ہوچکے ہیں اور وہ کلیئرنس سرٹیفکیٹ کے منتظر ہیں۔
عدالت نے کل شریف کا نام ای سی ایل سے ہٹانے کا حکم دیتے ہوئے انھیں چار ہفتوں تک صحت سے متعلق علاج کے بیرون ملک جانے کی اجازت دی ، جبکہ مسلم لیگ (ن) کے مجوزہ مسودے پر وفاقی حکومت کی جانب سے کیے جانے والے اعتراض کو مسترد کردیا۔

ثاقب شیخ۔