فرح گوگی اور ان کے شوہر کو واپس پاکستان لایا جائے گا، عطا تاڑر

فرح گوگی اور ان کے شوہر احسن جمیل گجر پر کرپشن، زمین کی فراڈ اور ہیروں کی اسمگلنگ کا ریکیٹ چلانے کا الزام لگاتے ہوئے، پنجاب کے وزیر داخلہ عطا تارڑ نے اتوار کو اس جوڑے کو انٹرپول کے ذریعے ملک میں واپس لانے کا عزم کیا ہے۔

حکومت تمام قانونی تقاضے پورے کرے گی

 پنجاب کے وزیر قانون ملک محمد احمد خان کے ہمراہ مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے تارڑ نے کہا کہ حکومت تمام قانونی تقاضے پورے کرے گی اور جوڑے کے خلاف ’’ریڈ وارنٹ‘‘ (انٹرپول کا ریڈ نوٹس) حاصل کرنے کی تمام کوششیں کرے گی۔ 

 ریڈ نوٹس ایک بین الاقوامی درخواست ہے جو انٹرنیشنل کریمنل پولیس آرگنائزیشن (انٹرپول) کو بھیجی جاتی ہے جس میں کسی فرد کی گرفتاری اور حوالگی کا مطالبہ کیا جاتا ہے۔ 

 انہوں نے پی ٹی آئی چیئرمین عمران خان، ان کی اہلیہ بشریٰ بی بی اور فرح گوگی پر قومی دولت لوٹنے کا الزام لگایا۔ 

انہوں نے کہا کہ فیصل آباد انڈسٹریل اسٹیٹ ڈویلپمنٹ اینڈ مینجمنٹ کمپنی کے چیف ایگزیکٹو آفیسر رانا یوسف اور سپیشل اکنامک زون کمیٹی کے سیکرٹری مقصود احمد کو اینٹی کرپشن اسٹیبلشمنٹ نے قیمتی مال کی غیر قانونی الاٹمنٹ سے متعلق کیس میں گرفتار کیا ہے۔ 

 انہوں نے کہا کہ فیصل آباد سپیشل اکنامک زون میں واقع 10 ایکڑ کا صنعتی پلاٹ فرح گوگی کو صرف 83 ملین روپے میں الاٹ کیا گیا تھا اور اس کی اصل مالیت 600 ملین روپے تھی۔ وزیر نے کہا کہ یہ پلاٹ جعلی کمپنی کے ذریعے گوگی کو منتقل کیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں | صحافی ایاز عامر پر لاہور میں حملہ  

یہ بھی پڑھیں | لوڈیشیڈنگ: کراچی میں احتجاج کے دوران تشدد سے خاتون جاں بحق   

 اس حوالے سے رواں ماہ کے اوائل میں مقدمہ درج کیا گیا تھا، انہوں نے کہا کہ اس مقدمے میں فرح گوگی، ان کی والدہ بشریٰ خان اور احسن جمیل گجر کو نامزد کیا گیا تھا۔ 

 انہوں نے سابق خاتون اول پر وزیراعظم ہاؤس میں ’ڈیلنگ‘ کا الزام لگایا۔ انہوں نے انکشاف کیا کہ عمران خان نے چھوٹے پیکٹوں میں منی لانڈرنگ کا نیا نظام متعارف کرایا۔ 

 انہوں نے کہا کہ عمران خان اپنی اہلیہ اور فرح گوگی کے ساتھ مل کر ہیروں کے ذریعے منی لانڈرنگ کا ریکیٹ چلا رہے ہیں۔ 

 تفصیلات بتاتے ہوئے عطا تارڑ نے بتایا کہ چھوٹے پیکٹوں میں ہیرے بیرون ملک سمگل کر کے بلیک مارکیٹ میں فروخت کیے جاتے تھے۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان گروپ کی قیادت کر رہے ہیں۔

بشریٰ بی بی کی لیک ہونے والی آڈیو کال کے بارے میں بات کرتے ہوئے جس میں وہ مبینہ طور پر عمران خان کے فوکس پرسن کو مخالف کو غدار ثابت کرنے کی ہدایت کر رہی تھیں۔ انہوں نے کہا کہ وہ ’’ماسٹر مائنڈ‘‘ ہیں۔ 

 عمران خان کو منشیات کے استعمال پر گرفتار کیا جا سکتا ہے عمران خان کو منشیات کے استعمال پر گرفتار کیا جا سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کا انہیں حراست میں لینے کا کوئی منصوبہ نہیں ہے۔ 

انہوں نے مزید کہا کہ کون نہیں جانتا کہ عمران خان بھنگ استعمال کرتے ہیں اور کوکین بنی گالہ تک کیسے پہنچتی ہے۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

ہمارا نیوز لیٹر جوائن کریں
تازہ ترین آرٹیکلز، نوکریوں اور تفریحی خبریں ڈائریکٹ اپنے انباکس میں حاصل کریں
یہاں ایک لاکھ ستر ہزار سبسکرائبرز ہیں