شاہ محمود قریشی نے دھمکی آمیز خط سے پہلے فون کال کی بھی تصدیق کر دی

اے آر وائی نیوز کی رپورٹ کے مطابق سابق وزیر خزانہ شاہ محمود قریشی نے انکشاف کیا ہے کہ پی ٹی آئی کی زیر قیادت وفاقی حکومت گرانے کی دھمکی دینے والے خط سے قبل انہیں ایک کال بھی موصول ہوئی تھی جس میں اس وقت کے وزیراعظم عمران خان کو روس کا دورہ منسوخ کرنے کا کہا گیا تھا۔ 

 تفصیلات کے مطابق شاہ محمود قریشی نے کہا کہ ایک ملک نے کال کے ذریعے پاکستان سے رابطہ کیا اور وزیراعظم کا دورہ روس منسوخ کرنے کا مطالبہ کیا۔

 

 سابق وزیر خارجہ نے کہا کہ امریکہ کے قومی سلامتی کے مشیر نے اپنے پاکستانی ہم منصب کو ٹیلی فون کیا کیونکہ بعد میں انہوں نے وضاحت کی کہ اس دورے کا یوکرین میں ہونے والی پیش رفت سے کوئی تعلق نہیں ہے۔ 

انہوں نے کہا کہ عمران خان کے دورہ روس کا منصوبہ ملٹری اسٹیبلشمنٹ سے مشاورت کے بعد طے کیا گیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں | تحریک انصاف نے 135 وفادار ساتھیوں کو ٹکٹ دینے کا فیصلہ کر لیا    

انہوں نے افسوس کا اظہار کیا کہ ایک بیرونی ملک نے پاکستان کے اندرونی معاملات میں مداخلت کی کوشش کی اور قومی اسمبلی میں تحریک عدم اعتماد پیش کرنے سے پہلے ہی اسے پیش کرنے کی کوشش سے آگاہ تھا۔

  اس سے قبل، شاہ محمود قریشی نے منگل کو مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز کی جانب سے ‘غیر ملکی سازش’ کے دھمکی آمیز خط پر لگائے گئے الزامات کی سختی سے تردید کی تھی۔ 

 مریم نواز کے الزامات پر ردعمل دیتے ہوئے شاہ محمود قریشی نے مریم نواز کے الزامات کو ’غیر ذمہ دارانہ‘ قرار دیتے ہوئے کہا کہ وہ اپنے الزامات کو درست ثابت کرنے کے لیے ثبوت فراہم کریں۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

ہمارا نیوز لیٹر جوائن کریں
تازہ ترین آرٹیکلز، نوکریوں اور تفریحی خبریں ڈائریکٹ اپنے انباکس میں حاصل کریں
یہاں ایک لاکھ ستر ہزار سبسکرائبرز ہیں