شاہین شاہ آفریدی علاج کے لئے لندن روانہ

پاکستانی فاسٹ بولر شاہین شاہ آفریدی

  پاکستان کرکٹ بورڈ نے ایک بیان میں کہا کہ پاکستانی فاسٹ بولر شاہین شاہ آفریدی پیر کو اپنی بحالی مکمل کرنے کے لیے دبئی سے لندن روانہ ہوگئے ہیں۔

 پی سی بی نے کہا کہ شاہین آفریدی کو بلاتعطل، وقفے وقفے سے گھٹنے کے ماہر کی دیکھ بھال کی ضرورت ہے جو کہ لندن میں دنیا کی بہترین اسپورٹس میڈیکل اور بحالی کی سہولیات کے طور پر شہرت کے بعد دستیاب ہے۔ اس لیے پاکستانی فاسٹ باؤر کو علاج کے لیے وہاں بھیجا جا رہا ہے۔

 پی سی بی کے چیف میڈیکل آفیسر ڈاکٹر نجیب اللہ سومرو نے کہا کہ میڈیکل ڈیپارٹمنٹ لندن میں رہتے ہوئے ان کی پیشرفت پر روزانہ فیڈ بیک حاصل کرے گا اور ہمیں یقین ہے کہ شاہین آئی سی سی مینز ٹی20 ورلڈ کپ سے قبل مکمل فٹنس پر واپس آجائیں گے۔

 پی سی بی کے بیان میں مزید کہا گیا کہ فاسٹ باؤلر پی سی بی کے میڈیکل ایڈوائزری پینل کی نگرانی میں رہیں گے جس میں لندن میں مقیم ڈاکٹر امتیاز احمد اور ڈاکٹر ظفر اقبال بھی شامل ہیں۔

یہ بھی پڑھیں | پاکستان کو میچ کون جتوا سکتا ہے؟ شعیب اختر نے بتا دیا

یہ بھی پڑھیں | ایشیا کپ: پاکستان جلد انڈیا کے خلاف میچ کی ٹیم فائنل کرے گا

 سال 2016 سے، ڈاکٹر امتیاز کوئنز پارک رینجرز فٹ بال کلب میں میڈیکل سروسز کے سربراہ ہیں، جب کہ ڈاکٹر ظفر 2015 سے کرسٹل پیلس فٹ بال کلب میں اسپورٹس میڈیسن کے سربراہ ہیں – وہ پہلے ٹوٹنہم ہاٹ پور ایف سی، لیورپول ایف سی اور کینٹ کے ساتھ کام کر چکے ہیں۔ 

شاہین آفریدی جولائی میں سری لنکا کے خلاف پہلے ٹیسٹ کے دوران فیلڈنگ کے دوران پی سی ایل کی انجری کا شکار ہو گئے تھے۔ اس کی تشخیص کے بعد، باؤلر ایشیا کپ 2022 سے باہر ہو گئے ہیں اور انگلینڈ کے دورہ پاکستان کے دوران بھی وہ غیر حاضر رہیں گے۔

 آئی سی سی مینز ٹی 20 ورلڈ کپ 2022 سے قبل تیز گیند باز سے مکمل فٹنس حاصل کرنے کی امید ہے، حالانکہ ان کی مسابقتی کرکٹ میں واپسی کا فیصلہ پی سی بی میڈیکل ایڈوائزری پینل کرے گا۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔