مصنف کے بارے میں

صفحۂ اول

تبصرے

    سیاحت سے پاکستان کے معاشی مسائل حل ہو سکتے ہیں، عمران خان

    وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ سیاحت پاکستان کی آمدنی اور روزگار کے مواقع کو بڑھانے کے لئے بہترین صلاحیتیں رکھتی ہے اور دنیا بھر سے سیاحوں کو اس قدرتی زمین کی طرف راغب کرنے کے لئے پاکستان کو صاف ستھرا رکھنا ان کا وژن ہے۔ 

    وزیر اعظم نے ٹائیگر فورس کے ایک اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سوئٹزرلینڈ ہمارے شمالی علاقوں کی نسبت آدھا سائز ہے اور ہماری قدرتی خوبصورتی کے ساتھ کوئی موازنہ نہیں ہے ، اس کے باوجود اس نے سیاحت سے 80 بلین ڈالر کی آمدنی حاصل کی ہے جبکہ ہماری مجموعی برآمدات 25 بلین ڈالر ہے۔ 

    یہ بھی پڑھیں | میرا مقصد فوج کے خلاف بات کرنا نہیں تھا، حامد میر نے رجوع کر لیا

    وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ میں سوئٹزرلینڈ اور آسٹریا گیا ہوں اور ان کی خوبصورتی کا موازنہ ہمارے  زمینوں سے کبھی نہیں کرسکا جو فطرت میں زیادہ خوبصورت ہیں۔ لیکن میں ان کی صفائی اور قوانین کے صحیح نفاذ کی تعریف کروں گا ، کیوں کہ کوئی بھی شخص اس کے ذاتی فائدے کے لئے قوانین کو توڑ نہیں سکتا ہے۔ 

    وزیر اعظم نے مقامی لوگوں سے کہا کہ وہ ملک کی خوشحالی اور ترقی کے لئے تمام سیاحتی مقامات پر مناسب توجہ اور دیکھ بھال کریں۔ انشاء اللہ ، ہم اتنے زیادہ پیسے کمائیں گے اور سیاحت میں اضافے کے ساتھ لوگوں کو روزگار ملے گا کہ انہیں نوکریوں کی تلاش میں ان علاقوں کو چھوڑنے کی ضرورت نہیں ہوگی۔

     انہوں نے علاقے سے منتخب ہونے والی اسمبلیوں میں منتخب اپنی پارٹی رہنماؤں کو مشورہ دیا کہ وہ اس زمین اور درختوں کی حفاظت کریں کیونکہ وہ بالآخر زیادہ سے زیادہ فوائد حاصل کریں گے جب ان کا علاقہ سیاحت کی وجہ سے ترقی کرے گا۔ 

    وزیر اعظم نے کہا کہ ماضی میں وادی کاغان میں جنگلات کی کٹائی کا سامنا کرنا پڑا تھا لیکن وہ درختوں کی شجرکاری مہم پر خوش ہیں جس نے علاقوں کی خوبصورتی کو بحال کیا۔ 

    انہوں نے کہا کہ ہمارے سامنے بیٹھے ہوئے نوجوان ہمارے مستقبل ہیں اور ہمیں ان کے لئے ایسے پاکستان کو پیچھے چھوڑنا ہے تاکہ آنے والی نسلیں فطرت کے تحفظ اور ماحول کو راحت بخش بنانے کی ہماری کوششوں کی تعریف کر سکیں۔

     نوجوانوں کی طرف اشارہ کرتے ہوئے ، عمران خان نے کہا کہ ان کے بڑے پاکستان کے ساتھ انصاف نہیں کرتے تھے۔ انہوں نے کہا کہ انہوں نے درختوں اور جنگلوں کو تباہ کر کے تحفظ فراہم نہیں کیا ، لیکن انہیں خوشی ہوئی کہ ڈویژنل انتظامیہ ان کے تحفظ کے لئے اقدامات اپنارہی ہے۔

     انہوں نے کہا کہ میں نے دنیا کا دورہ کیا لیکن اس قدر خوبصورتی کا مشاہدہ نہیں کیا جس قدر اللہ نے اس وادی کاغان کو خوبصورتی دی ہے۔

    جاویریہ حارث

    جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

    سبسکرائب
    کو مطلع کریں
    guest
    0 Comments
    Inline Feedbacks
    View all comments
    0
    آپ اس متعلق کیا کہتے ہیں؟ اپنی رائے کمنٹ کریںx
    ()
    x