سری لنکن کرکڑر کا بابر اعظم کو  مشورہ

بابر اعظم کی خراب پرفارمینس باعث تشویش

پاکستان کے کپتان اور اسٹار بلے باز بابر اعظم حال ہی میں خراب پرفارمینس دکھا رہے ہیں جو سری لنکا کے لیجنڈ مہیلا جے وردنے کے مطابق ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ میں جانے والے پاکستان کے لیے قدرے “تشویش” کا باعث ہے۔

 بابر ایشیا کپ میں چھ میچوں میں صرف 68 رنز بنا سکے جبکہ پاکستان فائنل میں سری لنکا سے ہار گیا۔ یہ ان کے لئے ٹی20 بلے بازوں میں سے ایک ہونے کے ناطے ایک جھٹکا تھا۔

 ٹیم کے ساتھی اور اوپننگ پارٹنر محمد رضوان اب بابر اعظم کے ساتھ جنوبی افریقہ کے ایڈن مارکرم سے پیچھے نمبر 3 پر ہیں۔

جے وردنے کے بابر اعظم متعلق ریمارکس

 جے وردنے نے آئی سی سی ریویو پر میزبان سنجنا گنیسن کو بتایا کہ بابر اعظم گزشتہ دو سالوں سے جس طرح سے بیٹنگ کر رہے ہیں، اس کے لیے اس طرح کا ٹورنامنٹ ہونا ایک تشویش کا باعث ہے۔ لیکن مجھے لگتا ہے کہ وہ اب بھی ایک معیاری کھلاڑی ہے۔

یہ بھی پڑھیں |  پرسنل اٹیک نہیں ہونے چاہیے، بابر اعظم کا عاقب جاوید کو جواب

یہ بھی پڑھیں |  اٹھائیس اگست کے پاک انڈیا میچ کے بعد انگلینڈ میں فساد

شاید یہ موقع ہے، آپ جانتے ہیں، پاکستان ایشیا کپ کا حصہ ہے اور ایسا نہیں ہے کہ اکثر ہندوستان اور پاکستان ایک دوسرے کے ساتھ کھیلتے ہیں۔ تو شاید تھوڑا دباؤ آ گیا ہو، میں تو یہ کہوں گا۔ لیکن وہ اب بھی معیاری کھلاڑی ہیں۔

رضوان اور بابر اعظم اوپننگ میں ایک مستقل جوڑی

پاکستان نے بیٹنگ میں ان کی کمی محسوس کی ہے کیونکہ رضوان اور بابر اعظم اوپننگ میں ایک مستقل جوڑی ہیں۔ پچھلے دو سالوں میں پاکستان کی کامیابی اسی بنیاد پر ہے، جہاں تمام بگ ہٹرز بیچ میں آتے ہیں اور وہ (بابر اور رضوان) پلیٹ فارم دیتے ہیں اور وہ اسے سنبھال لیتے ہیں۔ 

 مجھے یقین ہے کہ بابر اعظم واپس جائے گا اور دوبارہ اچھا کھیلے گا اور مزید مضبوط ہو کر واپس آئے گا۔

 جے وردھنے نے بابر کو دوہرے کردار سے نمٹنے کے لیے اچھا مشورہ دیا۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔