جہانگیر ترین نے اپنے گروپ کا اعلان کر دیا

   پاکستان تحریک انصاف کے سابقہ رہنما جہانگیر ترین نے پارلیمنٹ کے ایوان زیریں اور پنجاب اسمبلی میں ہم خیال ارکان اسمبلی کے ایک گروپ کا باقاعدہ اعلان کر دیا ہے۔

 تفصیلات کے مطابق راجہ ریاض قومی اسمبلی میں جہانگیر ترین جیسے ہم خیال گروپ کے پارلیمانی لیڈر ہوں گے جبکہ سعید اکبر نوانی پنجاب اسمبلی میں پارلیمانی لیڈر ہوں گے۔ 

عشائیہ میں شرکت کرنے والے جہانگیر ترین کے حامیوں میں سے ایک نعمان لنگاریال نے بتایا کہ اس تقریب میں 31 قانون سازوں نے شرکت کی۔ ممبر پنجاب اسمبلی (ایم پی اے) سلمان نعیم نے عشائیہ کے دوران کہا کہ جہانگیر ترین کے حامیوں نے باضابطہ طور پر اپنے گروپ کو شروع کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ 

جہانگیر ترین (آج) بدھ کو عدالت میں پیش ہوں گے۔ جہانگیر ترین کے ساتھ جو ہوا وہ غلط ہے۔ شوگر اسکینڈل میں پی ٹی آئی رہنما کے خلاف لگائے جانے والے الزامات کا ذکر کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اسی وجہ سے ہم جہانگیر ترین کی حمایت کر رہے ہیں۔

 انہوں نے مزید کہا کہ ہمیں وزیر اعظم عمران خان پر اعتماد ہے لیکن ہم اپنے ایجنڈے پر متفق ہیں۔ ایم پی اے سلمان نعیم نے کہا کہ ہم خیال ارکان نے جمعہ کے روز پنجاب اسمبلی میں اپنا پاور شو منعقد کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں | این اے 249 میں پیپلرز پارٹی کی جیت، دیگر جماعتوں کا انتخابی نتائج ماننے سے انکار  

یاد رہے کہ گذشتہ ماہ وزیر اعظم عمران خان نے بعض حامی قانون سازوں کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے واضح طور پر کہا تھا کہ شوگر اسکینڈل کی تحقیقات میں جہانگیر ترین کو ریلیف دینے کے لئے وفاقی تحقیقاتی ایجنسی (ایف آئی اے) متاثر نہیں ہوگی لیکن وہ ذاتی طور پر اس کا جائزہ لیں گے۔ 

 ایم این اےز کے وفد کے سربراہ راجہ ریاض نے اجلاس میں شرکت کے بعد میڈیا کو بتایا تھا کہ وزیر اعظم نے انہیں یقین دہانی کرائی ہے کہ وہ ذاتی طور پر اس معاملے کا جائزہ لیں گے اور اس بات کو یقینی بنائیں گے کہ کسی کے ساتھ ناانصافی نہ کی جائے۔

 جہانگیر ترین نے کہا تھا کہ وہ کسی بھی قسم کی تفتیش کا سامنا کرنے کے لئے تیار ہیں لیکن اپنے بیٹے کو اس معاملے میں گھسیٹنا بلاجواز تھا۔

 شوگر بیرن نے دعوی کیا تھا کہ مسلم لیگ (ن) نے اپنے دور حکومت میں ان کے کاروبار کی بھی چھان بین کی تھی لیکن یہاں تک کہ اس نے اپنے خلاف کسی سول کیس کو مجرمانہ شکل میں تبدیل نہیں کیا۔ 

لاہور میں ایڈیشنل سیشن جج کے ذریعہ جہانگیر ترین اور اس کے بیٹے دونوں کی ضمانت پہلے ہی مئی تک بڑھا دی گئی ہے۔ ان کی عبوری ضمانت میں توسیع کرتے ہوئے عدالت نے ایف آئی اے کو جلد سے جلد اپنی تحقیقات مکمل کرنے اور رپورٹ پیش کرنے کا حکم دیا۔ ان کے وکیل کے مطابق جہانگیر ترین اور ان کے بیٹے کے خلاف تین ایف آئی آر درج ہیں جبکہ ایف آئی اے نے ساڑھے چار ماہ کی مدت کے بعد صرف دو مقدمات درج کیے تھے۔

جاویریہ حارث

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

سبسکرائب
کو مطلع کریں
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments
0
آپ اس متعلق کیا کہتے ہیں؟ اپنی رائے کمنٹ کریںx
()
x