جانئے سحری سے متعلق فائدہ مند غذاؤں کے بارے میں

رمضان المبارک میں مسلمان روزہ رکھنے کے لئے سحری کرتے ہیں۔ سحری کرنا سنت رسول ہے۔ آئیے جانتے ہیں کہ ایسا کیا کھائیں کہ جس سے پورا دن کمزوری نا ہونے پائے اور ہمارا روزہ اچھے سےگزر جائے۔

 کم از کم 2-3 لیٹر پانی پیئے۔

 ہائیڈریٹ رہنے کا ایک آسان اور اہم طریقہ سحری کے دوران کافی پانی پینا ہے۔ مختلف مطالعات کے مطابق، کم از کم 60 اونس یا تقریباً 2 لیٹر پانی آپ کو گرمیوں کے موسم میں روزے کے دوران پورے دن کے لیے ہائیڈریٹ رکھنے میں مدد دے سکتا ہے۔ ٹپ یہ ہے کہ دھیرے دھیرے گھونٹ لیں اور ایک ہی بار میں نہ پئیں۔ 

 صحت مند اور ہلکا پھلکا کھائیں۔ 

سحری کا کھانا ہلکا اور صحت بخش ہونا چاہیے۔ اگر آپ کو لگتا ہے کہ سارا دن بہت زیادہ کھانا آپ کے لیے کافی ہوگا، تو آپ غلط ہیں۔ اصل بات یہ ہے کہ فائبر سے بھرپور غذا آپ کو پورا دن توانائی بخشے گی۔ 

 کِجوریں لازمی کھائیں۔ 

 رمضان کے دوران کھجور کو ترجیح دی جاتی ہے اور یہ روایت رہی ہے کہ انہیں کھانوں میں شامل کیا جائے جیسا کہ تاریخ میں حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم نے کیا تھا۔ سائنسی طور پر کھجور کو روزے کے دوران اہم سمجھا جاتا ہے کیونکہ ان میں کاپر، سیلینیم اور میگنیشیم وافر ہوتا ہے۔ وہ گلوکوز سے بھرپور ہوتے ہیں اس لیے توانائی فراہم کرنے میں مدد کرتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں | اسمبلی بحال؛ وزراء کو پروٹوکول واپس نا مل سکا    

دہی کو مت چھوڑیں۔ 

 یہاں تک کہ ایک چمچ دہی بھی حیرت انگیز کام کر سکتا ہے! سحری کھانے کے اختتام پر دہی کھانا سائنسی طور پر درست اور فائدہ مند ہے کیونکہ یہ آپ کے معدے کو سکون بخشتا ہے اور تیزابیت کو روکنے میں مدد کرتا ہے اور آخر کار آپ کو پانی کی کمی سے بھی بچاتا ہے۔ 

روزانہ ایک سیب اور کیلا پانی کی کمی کو دور کرتا ہے

کم از کم ایک کیلا اور سیب لازمی کھائیں کیونکہ وہ آپ کی خوراک میں اضافہ کریں گے۔ دونوں پھلوں میں کیلوریز کم ہوتی ہیں اور ضروری غذائیت جیسے فائبر، وٹامن سی، اور مختلف اینٹی آکسیڈنٹس زیادہ ہوتے ہیں جو آپ کو خشکی محسوس کرنے میں مدد دے سکتے ہیں۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔