بلوچستان میں بلدیاتی انتخابات کے دوسرے مرحلے کے لیے پولنگ جاری

بلوچستان بلدیاتی انتخابات کے لئےووٹ جاری

بلوچستان کے 32 اضلاع میں بلدیاتی انتخابات کے دوسرے مرحلے کے لیے پولنگ جاری ہے۔ 

 بلدیاتی انتخابات کے دوسرے مرحلے میں، پہلے مرحلے کے دوران منتخب ہونے والے کونسلرز 7 میونسپل کارپوریشنوں، 48 میونسپل کمیٹیوں اور 597 یونین کونسلوں کی مخصوص نشستوں کے لیے اپنا ووٹ کاسٹ کریں گے۔ 

الیکشن کمیشن کی ہدایت

 پولنگ شام 5 بجے تک بغیر کسی وقفے کے جاری رہے گی۔ الیکشن کمیشن کی ہدایت پر پولنگ والے علاقوں میں سیکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے ہیں۔ 

 خواتین کے لیے مختص کردہ 33 فیصد نشستوں کے لیے ووٹنگ ہو رہی ہے، 5 فیصد کسانوں، مزدوروں اور غیر مسلموں کے لیے۔

یہ بھی پڑھیں | کراچی کے بہترین سکولز کون سے ہیں؟

یہ بھی پڑھیں | کراچی میں پارکنگ فیس کی وصولی معطل

خواتین نشستوں کی تفصیل

 تفصیلات کے مطابق خواتین کی مخصوص نشستوں پر 2082 میں سے 786 خواتین امیدوار بلامقابلہ منتخب ہوئیں۔ خواتین کی 1295 نشستوں پر پولنگ ہو رہی ہے جبکہ 19 نشستوں پر کسی امیدوار نے کاغذات نامزدگی جمع نہیں کرائے۔ 

کسانوں کی 902 نشستوں پر 412 بلامقابلہ منتخب

 کسانوں کی 902 نشستوں پر 412 بلامقابلہ منتخب ہوئے جبکہ 10 کاغذات نامزدگی داخل نہ کرنے اور دیگر 480 نشستوں پر پولنگ جاری رہنے کی وجہ سے خالی رہیں۔ 

 مزدوروں کی 902 مخصوص نشستوں پر 408 بلامقابلہ منتخب ہوئے جبکہ 6 نشستوں پر کسی نے کاغذات نامزدگی جمع نہیں کرائے اور 488 نشستوں پر پولنگ جاری ہے۔ 

 اقلیتوں کی 902 نشستوں پر 146 امیدوار بلامقابلہ منتخب ہوئے ہیں، کاغذات نامزدگی جمع نہ ہونے کی وجہ سے 709 نشستوں پر انتخاب ہوگا، جبکہ 47 نشستوں پر پولنگ ہوگی۔ 

الیکشن کمیشن کا شفاف الیکشن کے لئے کردار

شفاف، آزادانہ، منصفانہ اور شفاف پولنگ کو یقینی بنانے کے لیے الیکشن کمیشن آف پاکستان نے بلوچستان میں بلدیاتی انتخابات کے لیے 32 ڈی آر اوز، 131 آر اوز، 145 اے آر اوز، 597 پریذائیڈنگ آفیسرز اور 597 پولنگ آفیسرز کو تعینات کیا ہے۔

زرين

زین ایک ایوارڈ یافتہ سابق شکاگو سٹی ہال کے سیاسی رپورٹر اور کالم نگار ہیں۔