مصنف کے بارے میں

صفحۂ اول

بس چلے تو نور مقدم کے قاتل کو گولی مار دوں، شیخ رشید

نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے نور مقدم قتل کیس کے بارے میں بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر ان کا بس چلتا تو وہ قاتل ظاہر جعفر کو گولی مار دیتے۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر شیخ رشید نے کہا کہ نالہ لئی کی تعمیر ان کی زندگی کا مشن ہے ، جس سے آس پاس کے علاقوں میں لوگوں کو امن ملے گا۔ 

تعلیم کے معاملے پر خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ حکومت تعلیم پر توجہ دے رہی ہے۔ انہوں نے راولپنڈی کو یونیورسٹیوں کے شہر میں تبدیل کرنے کی امید ظاہر کی۔

 مزید برآں ، انہوں نے مزید کہا کہ کوویڈ19  کے دوران فرنٹ لائن ورکرز کی خدمات قابل تحسین ہیں۔ 

یہ بھی پڑھیں | این اے 249 میں پیپلرز پارٹی کی جیت، دیگر جماعتوں کا انتخابی نتائج ماننے سے انکار

نور مقدم قتل کیس سے خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیر نے تبصرہ کیا کہ اگر ان کا بس چلتا تو وہ قاتل ظاہر جعفر کو گولی مار دیتے۔ 

واضح رہے کہ جنوبی کوریا میں پاکستان کے سابق سفیر شوکت مقدم کی بیٹی نور مقدم کو سیکٹر ایف 7/4 اسلام آباد میں بے دردی سے قتل کیا گیا تھا۔

 ملزم کی شناخت ظاہر جعفر نامی بزنس مین کے طور پر ہوئی ہے جس نے مبینہ طور پر لڑکی کا سر قلم کرنے سے پہلے اسے گولی مار دی تھی۔ 

 ابتدائی رپورٹس کے مطابق پولیس نے ملزم ظفر جعفر کو قتل گاہ سے گرفتار کیا جس نے بعد میں اپنی دوست کو قتل کرنے کا اعتراف کیا۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔