بریکنگ؛ ڈالر کی قیمت 221 تک پہنچ گئی

منگل کو انٹربینک مارکیٹ میں پاکستانی روپیہ ڈالر کے مقابلے میں 221 روپے تک پہنچ گیا

پاکستان میں جاری سیاسی بے چینی اور بگڑتے معاشی حالات کی وجہ سے منگل کو انٹربینک مارکیٹ میں پاکستانی روپیہ ڈالر کے مقابلے میں 221 روپے تک پہنچ گیا ہے۔ پیر کو 215.20 روپے فی روپیہ پر بند ہونے سے پہلے ڈالر صبح 12:00 بجے کے قریب 5.80 روپے بڑھ کر مارکیٹ میں اب تک کی بلند ترین سطح پر پہنچ گیا۔ 

 اوپن مارکیٹ میں امریکی ڈالر کی قیمت 6 روپے اضافے سے 222 روپے تک پہنچ گئی ہے۔ ماہرین کے مطابق آج کے سیشن کے اختتام تک غیر ملکی کرنسی ایک نیا سنگ میل عبور کر سکتی ہے۔ روپیہ 26 مارچ 2020 کے بعد سے روزانہ کی بلند ترین شرح پر گرا ہے۔

یہ بھی پڑھیں | صدر عارف علوی کا نیلسن منڈیلا کی زندگی اور جدوجہد کو خراج تحسین

یہ بھی پڑھیں | کراچی ائیرپورٹ میں ایک اور انڈین جہاز کی ایمرجنسی لینڈنگ

 یہ تبدیلی ایک ایسے وقت میں رونما ہوئی ہے جب پنجاب کے ضمنی انتخابات میں مسلم لیگ ن کی شکست سے سیاسی بے چینی پھیلی ہے اور درآمدی دباؤ کی وجہ سے مقامی کرنسی نئی نچلی سطح پر پہنچ گئی تھی۔ 

 ریٹنگ ایجنسی نے ایک بیان میں کہا ہے کہ 2022 کے اوائل سے پاکستان کی بیرونی مالیاتی صورتحال اور فنانسنگ کے حالات نمایاں طور پر خراب ہوئے ہیں، جس کی عکاسی آؤٹ لک کے منفی پر نظرثانی سے ہوتی ہے۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

ہمارا نیوز لیٹر جوائن کریں
تازہ ترین آرٹیکلز، نوکریوں اور تفریحی خبریں ڈائریکٹ اپنے انباکس میں حاصل کریں
یہاں ایک لاکھ ستر ہزار سبسکرائبرز ہیں