مصنف کے بارے میں

صفحۂ اول

اپنی مرضی سے نازیبا ویڈیوز بنوائیں، عائشہ اکرام کا الزام لگانے والوں کو جواب

 لاہور۔ لاہور۔

عائشہ اکرام نے خود پر جان بوجھ کر نازیبا ویڈیوز بنانے کے حوالے سے الزامات کا جواب دے دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق عائشہ اکرام سے ایک نجی اینکر نے جب ریمبو کی جانب سے لگائے گئے الزامات سے متعلق پوچھا تو  عائشہ نے کہا کہ ایسا کچھ بھی نہیں ہے اور نا ہی مجھے کچھ علم تھا کہ مینار پاکستان میں ایسا کچھ ہو گا۔

عائشہ نے بتایا کہ اسے مینار پاکستان ریمبو لے کر گیا کہ وہاں میرے کچھ فینز مجھ سےملنا چاہتے ہیں تو جب میں وہاں گئی تو ایک ہجوم نے مجھ پر حملہ کر دیا۔ مجھے تو علم نہیں تھا کہ وہاں اتنا بڑا ہجوم ہو گا۔

عائشہ نے ریمبو پر الزام لگاتے ہوئے کہا کہ اس نے یہ سب پیسوں کے لئے کیا ہے اور وہ مجھے دو سال سے بلیک میل کر رہا تھاجب سے اس کے ہاتھ میری ایک ویڈیو لگی تھی جو ہونے والے شوہر کے ساتھ تھی۔ 

یہ بھی پڑھیں | مینار پاکستان واقعہ: کیا واقعی عائشہ اکرم اور ریمبو بھاری رقم بٹور چکے ہیں؟   

اینکر نے سوال کیا کہ اگر دوسال سے ریمبو آپ کو بلیک میل کر رہا تھا تو آپ نے مینار پاکستان واقعہ سے پہلے یہ کبھی کیوں نا بتایا؟ تو اس پر عائشہ نے کہا کہ مجھے اندازہ نہیں تھا کہ وہ یہ کچھ کرے گا۔

اینکر کے سوال کہ ریمبو کب سے آپ کو بلیک میل کر رہا ہے؟ ٹک ٹاک ویڈیوز بنانے سے پہلے یا بعد میں؟ تو عائشہ نے کہا کہ ویڈیوز بنانے کے کچھ دیر بعد اسکے ہاتھ میری کمزوری یعنی ویڈیو آ گئی۔ 

عائشہ نے مزید بتایا کہ ٹک ٹاک کے حوالے سے ہمارا ڈھائی سال کا معاہدہ تھا۔ یہ معاہدہ بلیک میلنگ کے دوران ہوا، پہلے یا بعد میں؟ اس سوال کا کوئی واضح جواب عائشہ نہیں دے سکی۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔