مصنف کے بارے میں

صفحۂ اول

انڈیا میں ہر چار منٹ بعد ایک خوکشی ہو رہی ہے

صحت کے تازہ ترین اعدادوشمار بھارت کی ذہنی صحت کی سنگین تصویر پیش کرتے ہیں جس سے یہ ظاہر ہوتا ہے کہ ہر چار منٹ میں ایک شخص خود کشی کرتا ہے۔ 

نیشنل ہیلتھ پروفائل نے خودکشی کی اموات کی بڑھتی ہوئی تعداد پر خطرے کی گھنٹی بجا دی ہے۔ یہ تعداد 2018 کے ایک سال میں مجموعی طور پر 1،33،623 ہے۔ جس کا مطلب یہ ہے کہ ہر روز اور ایک گھنٹے میں 156 خود کش ہلاکتیں ہوتی ہیں۔

 اعداد و شمار میں یہ بھی بتایا گیا ہے کہ خواتین کے مقابلے میں ہندوستانی مردوں میں خودکشی کا زیادہ رجحان ہے۔

زرائع سے پتہ چلا ہے کہ بھارت میں ہونے والی خودکشی کی تقریبا 70 فیصد اموات میں مرد بھی شامل ہیں۔ خود کو ہلاک کرنے والے 1،33،623 افراد میں سے 68.49 فیصد (91،528) مرد تھے جبکہ 42،088 خواتین تھیں۔

 مردوں کے ذریعہ خودکشی کی تعداد 2000 میں 66،032 اور 2008 میں 80،544 سے بڑھ کر اب 91،528 ہوگئی ہے۔ خودکشیوں سے مردانہ اموات کی تعداد خواتین کی نسبت دوگنی ہے۔ 

تازہ ترین اعداد و شمار کے مطابق ، سب سے زیادہ خود کشی کا بوجھ مہاراشٹر میں ہے (16،970 اموات) ، اس کے بعد تامل ناڈو (15،777) اور بنگال (14،602) ہیں۔ صحت کے اعداد و شمار سے یہ بھی پتہ چلتا ہے کہ 30 سے ​​45 سال کی پیداواری عمر میں خودکشی سب سے زیادہ ہے۔ 

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔