انڈیا اچھی ٹیم ہے مگر پاکستان کا مقابلہ نہیں، راشد لطیف کی تعریف

پاکستان بھارت سے بہتر کرکٹ ٹیم ہے

سابق وکٹ کیپر راشد لطیف نے کہا کہ موجودہ وقت میں پاکستان بھارت سے بہتر کرکٹ ٹیم ہے۔ تجربہ کار کا کہنا تھا کہ مین ان گرین میں ایسے کھلاڑی ہیں جن میں کپتان بابر اعظم، محمد رضوان اور شاہین شاہ آفریدی شامل ہیں، جنہیں انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) نے ایوارڈز سے نوازا ہے۔

 انہوں نے اچھی کرکٹ کھیلنے پر ٹیم انڈیا کی تعریف کی، لیکن ساتھ ہی یہ بھی کہا کہ بین الاقوامی کرکٹ میں پاکستان کی طرح کوئی اور ٹیم اتنی اچھی نہیں کھیل رہی ہے۔ 

انہوں نے کہا کہ بھارت بلاشبہ ایک اچھی ٹیم ہے، لیکن پاکستان جس طرح سے کرکٹ کھیل رہا ہے اس کی کوئی مثال نہیں ملتی۔ پاکستان کے پاس شاہین شاہ آفریدی، بابر اعظم اور محمد رضوان جیسے کھلاڑی ہیں جنہیں اس وقت آئی سی سی نے بہترین کھلاڑی قرار دیا ہے۔

سال 1992 سے 2003 تک پاکستان کے لیے 37 ٹیسٹ اور 166 ون ڈے کھیلنے والے لطیف

سال 1992 سے 2003 تک پاکستان کے لیے 37 ٹیسٹ اور 166 ون ڈے کھیلنے والے لطیف نے کہا کہ ہندوستان اور پاکستان آئندہ ایشیا کپ میں مضبوط فیورٹ کے طور پر جائیں گے۔

یہ بھی پڑھیں | سرفراز احمد کو ان کے بیٹے نے کلین بولڈ کر دیا 

یہ بھی پڑھیں | عید قربان: سرفراز احمد نے اپنے قربانی کے جانور کا نام رکھ لیا   

 اس میں کوئی شک نہیں کہ دوسری ٹیمیں بھی مسابقتی ہیں لیکن ایشیا کپ 2022 میں اہم مقابلہ بھارت اور پاکستان کے درمیان ہوگا۔ 

 لطیف نے یہ بھی کہا کہ دبئی انٹرنیشنل کرکٹ اسٹیڈیم میں گزشتہ سال کے T20 ورلڈ کپ کے میچ میں مین ان بلیو کو 10 وکٹوں سے شکست دینے کے بعد پاکستان کا مورال اور اعتماد بلند ہوگا۔ 

 لطیف نے مزید کہا کہ میں پاکستان کے لیے ایشیا کپ 2022 جیتنے کے لیے پر امید ہوں۔ حالیہ T20 ورلڈ کپ 2021 میں بھارت کے خلاف جیت نے پاکستان کے لیے امیدیں بڑھا دی ہیں۔

 اس کے بعد، رضوان اور بابر نے اس بات کو یقینی بنایا کہ انہوں نے ابتدائی وکٹ کے لیے 152 رنز کی شراکت قائم کی اور پاکستان کو 13 گیندیں باقی رہ کر فتح تک پہنچا دیا۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

ہمارا نیوز لیٹر جوائن کریں
تازہ ترین آرٹیکلز، نوکریوں اور تفریحی خبریں ڈائریکٹ اپنے انباکس میں حاصل کریں
یہاں ایک لاکھ ستر ہزار سبسکرائبرز ہیں