مصنف کے بارے میں

صفحۂ اول

تبصرے

    امارات اسرائیل معاہدے پر 15 ستمبر کو دستخط ہوں گے

    امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اسرائیل اور متحدہ عرب امارات کے مابین تعلقات کو معمول پر لانے والے مشرق وسطی کے معاہدے کے لئے 15 ستمبر کو دستخط کرنے کی تقریب کا انعقاد کریں گے۔

     اطلاعات کے مطابق سینئر امریکی عہدیداروں نے بتایا کہ ممکنہ طور پر دونوں ممالک کے سینئر وفود کی قیادت اسرائیلی وزیر اعظم بینجمن نیتن یاہو اور اماراتی وزیر برائے امور خارجہ شیخ عبداللہ بن زید النہیان کریں گے جو متحدہ عرب امارات کے ولی عہد شہزادے کے بھائی ہیں۔ نیتن یاھو نے ٹویٹر پر اپنی شرکت کی تصدیق کی۔

     اسرائیلی رہنما نے کہا کہ وہ فخر محسوس کرتے ہیں کہ وہ اگلے ہفتے صدر ٹرمپ کی دعوت پر واشنگٹن روانہ ہوں گے اور اسرائیل اور امارات کے مابین امن معاہدے کے قیام کے سلسلے میں وائٹ ہاؤس میں ہونے والی تاریخی تقریب میں شرکت کرنے پر فخر محسوس کرتے ہیں۔ 

    اس معاہدے کے ایک حصے کے طور پر ، 13 اگست کو وائٹ ہاؤس میں اعلان کیا گیا تھا کہ حکام نے 18 ماہ کی بات چیت کے بعد ، خلیجی ریاست نے اسرائیل کے ساتھ معمول کے تعلقات پر اتفاق کیا ہے۔ جبکہ اسرائیل مغربی کناروں کے مقبوضہ حصوں کو معطل کرنے کے منصوبوں پر عمل کرنے پر راضی ہوگیا ہے۔

     یہ معاہدہ فلسطینیوں اور ان کے علاقائی اتحادیوں کی زد میں آچکا ہے ، جو دعوی کرتے ہیں کہ اس نے تعطل کا شکار مذاکرات میں فلسطینیوں کے مؤقف کو خطرے میں ڈال دیا ہے جس سے فلسطینیوں کا آزاد ریاست قائم کرنا مزید مشکل ہو گیا ہے۔

    فلسطینی عہدیداروں نے بھی متنبہ کیا ہے کہ اگر عرب اکثریتی اقوام اسرائیل کو تسلیم کرتی ہیں تو ، وہ اس جمود کو بڑے پیمانے پر قبول کرنے کا اشارہ دے سکتی ہے۔ سربیا نے حال ہی میں اعلان کیا ہے کہ وہ اپنا سفارتخانہ تل ابیب سے یروشلم منتقل کرے گا ، جسے فلسطینی اپنی مستقبل کی ریاست کا دارالحکومت سمجھتے ہیں۔

     فلسطین کے ایک سینئر عہدیدار صاب ایریکات نے سربیا کے اپنے سفارتخانہ منتقل کرنے کے فیصلے پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ ٹرمپ کی دوبارہ انتخابات کی امیدوں کو “فلسطین کو مظلوم” بناتا ہے۔ ٹرمپ اپنے انتخابی عزائم کا شکار ہوگیا ہے ، جس کی ٹیم کوئی بھی اقدام اٹھائے گی ، چاہے وہ امن کے لئے کتنا ہی تباہ کن ہو۔

    جاویریہ حارث

    جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

    سبسکرائب
    کو مطلع کریں
    guest
    0 Comments
    Inline Feedbacks
    View all comments
    0
    آپ اس متعلق کیا کہتے ہیں؟ اپنی رائے کمنٹ کریںx
    ()
    x