الیکشن کمیشن کی خیبر پختونخواہ میں ضمنی الیکشن ملتوی کرنے کی دھمکی

الیکشن کمیشن کی ضمنی انتخابات ملتوی کرنے کی دھمکی

الیکشن کمیشن آف پاکستان (ای سی پی) نے خیبرپختونخوا میں ضمنی انتخابات ملتوی کرنے کی دھمکی دی ہے کہ پبلک آفس ہولڈرز کی جانب سے ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزیاں جاری ہیں۔ 

 یہ فیصلہ چیف الیکشن کمشنر (سی ای سی) سکندر سلطان راجہ کی صدارت میں ہونے والے اعلیٰ سطحی اجلاس کے دوران کیا گیا جس میں سرکاری مشینری اور ہیلی کاپٹروں کے سیاسی استعمال اور وزیراعلیٰ اور وزراء کی جانب سے ضابطہ اخلاق کی مسلسل خلاف ورزیوں پر غور کیا گیا۔ 

سرکاری افسران کے خلاف قانونی کارروائی کا فیصلہ

 اجلاس میں ضابطہ اخلاق کی مسلسل خلاف ورزیوں پر وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا اور دیگر سرکاری افسران کے خلاف قانونی کارروائی کا فیصلہ کیا گیا۔ 

الیکشن کمیشن نے واضح کیا کہ اگر صوبائی حکومت نے خلاف ورزیاں بند نہ کیں تو کے پی میں ضمنی انتخابات ملتوی کر دیے جائیں گے۔ 

 الیکشن چیف نے اجلاس کے دوران کہا کہ چیف سیکرٹری اور ایڈووکیٹ جنرل حکومت کو بتائیں کہ خلاف ورزی کسی صورت برداشت نہیں کی جائے گی۔ 

انہوں نے مزید کہا کہ ای سی پی ضمنی انتخابات میں تمام امیدواروں کے لیے یکساں مواقع کو یقینی بنائے گا۔ 

یہ بھی پڑھیں |  لندن: شہباز شریف کی اپنے بھائی نواز شریف سے سیاسی موضوعات پر گفتگو

یہ بھی پڑھیں |  پنجاب میں ن لیگی وفاقی وزراء کے خلاف دہشت گردی کے مقدمے

امیدواروں کے خلاف کاروائی

 انہوں نے مزید کہا کہ خلاف ورزی کی صورت میں تمام جماعتوں اور ان کے امیدواروں کے خلاف بلا امتیاز کارروائی کی جائے گی۔ 

سی ای سی نے کہا کہ چیف سیکرٹری اپنی حکومت کو پیغام پہنچائیں، اگر صوبائی حکومت الیکشن کی حمایت کرنے کو تیار نہیں تو ضمنی الیکشن ملتوی کرنا پڑے گا۔

 اس کے علاوہ ای سی پی نے معاملے کی باضابطہ سماعت کرنے کا بھی فیصلہ کیا ہے اور فریقین کو نوٹس جاری کرنے کی ہدایت کی ہے۔ 

پی ٹی آئی ممنوعہ فنڈنگ کیس

یاد رہے کہ ای سی پی نے پی ٹی آئی کو ممنوعہ فنڈنگ ​​کیس سے متعلق اپنے اکاؤنٹس کی تفصیلات جمع کرانے کے لیے چھ ہفتے کی مہلت دی تھی۔

 چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجہ کی سربراہی میں پانچ رکنی بنچ نے کیس کی سماعت کی۔ 

سی ای سی نے پی ٹی آئی کے وکیل سے کہا کہ انہیں ایک سادہ سوال کا جواب دینا ہے کہ ممنوعہ فنڈنگ ​​کیس کے فیصلے کے تناظر میں پارٹی فنڈز کیوں نہ ضبط کیے جائیں۔ 

 شاہ خاور کی درخواست پر سی ای سی نے پی ٹی آئی کو جواب داخل کرنے کے لیے چھ ہفتے دینے پر رضامندی ظاہر کرتے ہوئے کیس کی سماعت 6 نومبر تک ملتوی کر دی۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔