اقوام متحدہ سے خطاب میں وزیر اعظم عمران خان کی کوویڈ19 کے دوران ترقی پذیر ممالک کے لئے فوری معاشی مدد کی اپیل

وزیر اعظم عمران خان نے جمعہ کو  کوویڈ19 کے دوران ترقی پذیر ممالک میں معاشی خاتمے سے کیسے بچنے کے لئے اقوام متحدہ میں 10 نکاتی ایجنڈا پیش کیا۔

 انہوں نے عملی طور پر اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے دو روزہ خصوصی اجلاس سے خطاب کیا۔ جمعرات کو شروع ہونے والے اس سیشن میں ،  کورونا وائرس سے چھٹکارے کے لئے متحد ہو کر ردعمل کا منذوبہ بنانا تھا۔ 

اس سے پہلے آن لائن ویڈیوز کے ذریعے 141 مقررین نے خطاب کیا جن میں 53 سربراہان مملکت ، 39 سربراہان ، چار نائب وزیر اعظم اور 38 وزیر شامل ہیں۔ 

اسلام آباد سے ہونے والے سربراہی اجلاس کو ان کے ریکارڈ شدہ ویڈیو پیغام میں ان کے منصوبے کے بارے میں تفصیل سے بتایا گیا جس میں ترقی پذیر ممالک کو ہنگامی مالی مدد بھی شامل ہے۔

 انہوں نے کہا کہ کوویڈ19 بے حد انسانی اذیت کا باعث بنا ہے۔ وزیر اعظم عمران نے روشنی ڈالی کہ ترقی پذیر ممالک میں لگ بھگ 100 ملین افراد انتہائی غربت کی لپیٹ میں آجائیں گے جبکہ امیر ممالک اپنی معاشیوں کی بحالی کے لئے مالی محرک کے طور پر 13 ٹریلین ڈالر لگاتے ہیں۔ 

وزیر اعظم نے کہا کہ ترقی پذیر ممالک کے پاس اتنے بڑے معاشی محرک کے متحمل ہونے کے وسائل نہیں ہیں کہ وہ کوویڈ19 سے چھٹکارے کے لئے درکار 2 ٹریلین ڈالر لگا سکیں۔

 انہوں نے کہا کہ بین الاقوامی برادری سے معاشی بحران سے بچنے کے لئے کچھ اہم ترجیحی اقدامات کی نشاندہی اور ان پر عمل درآمد کی درخواست ہے۔

 وزیراعظم عمران کا 10 نکاتی ایجنڈا کیا ہے؟ 

یہ بھی پڑھیں | مونٹریال کے جنوبی ایشین فلم فیسٹیول میں پاکستانی شارٹ فلم ‘ ہوم 1947 ’ جیت گئی

 کوویڈ19 کے خاتمے تک کم آمدنی اور زیادہ تر دباؤ والے ممالک کے لئے قرض معطلی۔ ایک:

دو: ترقی یافتہ ممالک کے لئے قرض کی منسوخی۔ 

تین: متفقہ کثیر جہتی فریم ورک کے تحت دوسرے ترقی پذیر ممالک کے عوامی شعبے کے قرض کی تنظیم نو۔

چار: پانچ سو ارب کے خصوصی ڈرائنگ حقوق کا ایک عام مختص۔

 پانچ: کثیرالجہتی ترقیاتی بینکوں کے ذریعہ کم آمدنی والے ممالک میں مراعات یافتہ مالی اعانت میں توسیع۔

چھ: کم لاگت پر قلیل مدتی قرضوں کی فراہمی کے لئے ایک نئی ’لیکویڈیٹی اینڈ پائیداری سہولت‘ تشکیل دینا۔

سات: زیرو اشاریہ سات فیصد سرکاری ترقیاتی امداد کے وعدوں کو پورا کرنا۔ 

 پائیدار انفراسٹرکچر میں مطلوبہ 1.5 ٹریلین ڈالر سالانہ سرمایہ کاری کو متحرک کرنا۔ آٹھ؛

نو: ترقی پذیر ممالک میں آب و ہوا کے عمل کے لئے ہر سال 100 بلین درخت کو متحرک کرنے کے متفقہ ہدف کا حصول۔ 

 دس: ترقی پذیر ممالک سے بڑے ممالک میں غیر قانونی مالی اخراج کو روکنے کے لئے فوری اقدام ، غیر ملکی ٹیکس پناہ گاہوں اور اسی وقت ، بدعنوان سیاستدانوں اور مجرموں کے ذریعہ چوری شدہ ان کے اثاثوں کو فوری طور پر ان ممالک میں واپس کرنا۔

جاویریہ حارث

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔