افغانستان: زلزلے سے اموات کی تعداد 280 ہو گئی

صبح افغانستان اور پاکستان کے کچھ حصوں میں آنے والے 6.1 شدت کے زلزلے میں ہلاک افراد کی تعداد 280 ہو گئی

افغانستان کی سرکاری خبر رساں ایجنسی نے اطلاع دی ہے کہ بدھ کی صبح افغانستان اور پاکستان کے کچھ حصوں میں آنے والے 6.1 شدت کے زلزلے میں ہلاک افراد کی تعداد 280 ہو گئی ہے۔

 زرائع کے مطابق، یہ زلزلہ گنجان آباد جنوب مشرقی افغانستان میں خوست شہر سے تقریباً 44 کلومیٹر کے فاصلے پر 51 کلومیٹر کی گہرائی میں آیا۔ 

تباہ شدہ مکانات کے مناظر سامنے آ رہے ہیں جس میں رہائشی مٹی کی اینٹوں اور دیگر ملبے کو اٹھا رہے ہیں۔ زخمیوں کو بھی ہیلی کاپٹروں میں لے جایا جا رہا ہے۔ 

طالبان انتظامیہ کی ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی کے سربراہ محمد نسیم حقانی نے کہا کہ تصدیق شدہ اموات میں سے زیادہ تر صوبہ پکتیکا میں ہیں جہاں 100 افراد ہلاک اور 250 زخمی ہوئے۔

یہ بھی پڑھیں | کراچی: شدید مطلوب ٹی ٹی پی دہشتگرد گرفتار  

یہ بھی پڑھیں | بریکنگ: ڈالر کے مقابلے میں روپیہ 207 کا ہو گیا   

مشرقی صوبوں ننگرہار اور خوست میں بھی ہلاکتوں کی اطلاع ملی ہے

 انہوں نے مزید کہا کہ مشرقی صوبوں ننگرہار اور خوست میں بھی ہلاکتوں کی اطلاع ملی ہے جبکہ حکام مزید ہلاکتوں کی جانچ کر رہے ہیں۔

 اطلاعات کے مطابق ملک کے مشرقی صوبے پکتیکا میں زلزلے سے کم از کم 150 افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔ 

 باختر نیوز ایجنسی نے الگ سے اطلاع دی ہے کہ امدادی کارکن ہیلی کاپٹر کے ذریعے پہنچ رہے ہیں۔ خبر رساں ایجنسی کے ڈائریکٹر جنرل عبدالواحد ریان نے ٹوئٹر پر لکھا کہ پکتیکا میں 90 مکانات تباہ ہو گئے ہیں اور درجنوں افراد کے ملبے تلے دبے ہونے کا خدشہ ہے۔ 

پاکستان کی سرحد کے قریب صوبہ پکتیکا کی فوٹیج میں دکھایا گیا ہے کہ متاثرین کو ہیلی کاپٹروں میں لے جایا جا رہا ہے تاکہ علاقے سے ہوائی جہاز لے جایا جا سکے۔ 

 لاہور، ملتان، کوئٹہ اور پاکستان کے کئی دیگر علاقوں میں بھی زلزلے کے جھٹکے محسوس کیے گئے ہیں۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

ہمارا نیوز لیٹر جوائن کریں
تازہ ترین آرٹیکلز، نوکریوں اور تفریحی خبریں ڈائریکٹ اپنے انباکس میں حاصل کریں
یہاں ایک لاکھ ستر ہزار سبسکرائبرز ہیں