اسٹریلوی کھلاڑی پاکستان وزٹ کر کے عوام کو متاثر کر سکتے ہیں؛ عثمان خواجہ

بلے باز عثمان خواجہ نے کہا ہے کہ دورہ پاکستان آسٹریلیا کے لیے کرکٹ کو “بحال کرنے” اور عوام کو متاثر کرنے کا بہترین موقع ہے۔ 

یاد رہے کہ آسٹریلیا 3 مارچ سے ملک کا پہلا دورہ شروع کرنے والا ہے۔ 

عثمان خواجہ، جو پاکستان میں پیدا ہوئے اور ملک میں پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) کھیل چکے ہیں، نے کہا کہ وہ ٹورنگ پارٹی کا حصہ بننے کی امید کر رہے ہیں۔ 

مجھے ہمیشہ برصغیر، بنگلہ دیش، بھارت اور خاص طور پر پاکستان میں زبردست سپورٹ حاصل رہی ہے جہاں میں پیدا ہوا ہوں۔ انہوں نے اپنے پی ایس ایل کے وقت کو بھی یاد کیا جب وہ کھیلے تھے۔

یہ بھی پڑھیں | کیا مراد علی شاہ اپنی پی ایس ایل ٹیم بنانے جا رہے ہیں؟

عثمان خواجہ نے سڈنی کرکٹ گراؤنڈ میں ایشز کے چوتھے میچ میں دو سنچریاں بنائی تھیں۔  میرے خیال میں آسٹریلوی کرکٹ کے لیے تھوڑا سا پیچھے ہٹنے کا یہ بہت اچھا موقع ہے۔ میں نے لڑکوں سے کہا کہ آپ دراصل کرکٹرز کی اس نسل کو متاثر کر سکتے ہیں جنہوں نے آپ کو کبھی کھیلتے ہوئے نہیں دیکھا۔

مجھے نہیں لگتا کہ کھیل بحالی کے لئے پاکستان جیسے ملک کا دورہ کرنے سے بہتر کوئی طریقہ ہے جو اتنے عرصے سے محروم ہے۔ اس لیے امید ہے کہ ہم نہ صرف میری خاطر بلکہ پاکستان کرکٹ اور سب کے لیے وہاں پہنچ جائیں گے۔ 

یاد رہے کہ آسٹریلیا کو اس دورے میں 3 ٹیسٹ، 3 ون ڈے اور ایک ٹی ٹوئنٹی کھیلنا ہے۔ یہ دورہ 3 مارچ کو ٹیسٹ سے شروع ہوگا اور 5 اپریل کو ٹی 20 کے ساتھ ختم ہوگا۔

حرمین رضا

جاویریہ حارث اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔

ہمارا نیوز لیٹر جوائن کریں
تازہ ترین آرٹیکلز، نوکریوں اور تفریحی خبریں ڈائریکٹ اپنے انباکس میں حاصل کریں
یہاں ایک لاکھ ستر ہزار سبسکرائبرز ہیں