آئی انڈسٹری پہ کوئی ٹیکس نہیں لگا رہے، مفتاح اسماعیل نے وضاحت کر دی

سوشل میڈیا پلیٹ فارم سے کمانے والوں پر ٹیکس نہیں لگا رہے

وفاقی حکومت نے یوٹیوب اور دیگر سوشل میڈیا پلیٹ فارمز سے کمائی کرنے والوں پر ٹیکس عائد کرنے کی خبروں کو مسترد کر دیا ہے۔

وفاقی وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب اور وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے میڈیا کو بتایا کہ آئندہ مالی سال 2022-23 کے بجٹ کے لیے ایسی کوئی تجویز زیر غور نہیں ہے اور آئی ٹی انڈسٹری پر کوئی ٹیکس عائد نہیں کیا جا رہا ہے۔

 قومی معیشت پر بڑھتے ہوئے دباؤ کے درمیان مسلم لیگ (ن) کی زیر قیادت مخلوط حکومت سابق وزیراعظم عمران خان کی برطرفی کے بعد اپنا پہلا بجٹ پیش کرنے جا رہی ہے۔ 

یہ بھی پڑھیں | انڈسٹری سیکٹر میں لوڈشیڈنگ زیرو کر دی؛ خرم دستگیر کا دعویعامر لیاقت حسین انتقال کر گئے 

یہ بھی پڑھیں | عامر لیاقت حسین انتقال کر گئے 

یوٹیوبرز پر ٹیکس لگانے کے بارے میں افواہیں اس وقت آتی ہیں جب حکومت 6 بلین ڈالر انٹرنیشنل مانیٹری فنڈ کے رکے ہوئے قرض پروگرام کو بحال کرنے کے لیے ایندھن اور بجلی کی قیمتوں میں اضافے سمیت تمام کوششیں کر رہی ہے۔ 

 دونوں وزراء نے ان رپورٹوں کو بے بنیاد قرار دیتے ہوئے کہا کہ حکومت آن لائن کاروبار سے منسلک لوگوں کو مزید مدد فراہم کرنا چاہتی ہے۔ 

انہوں نے کہا کہ خوشگوار ماحول انہیں اپنے کاروبار کو بڑھانے میں مدد دے گا جس سے نقدی کی کمی کے شکار ملک کو اربوں ڈالر مل سکتے ہیں۔

حرمین رضا

حرمین رضا اردو خبر میں پاکستان میں مقیم مصنف اور سابق ایڈیٹر ہیں۔