پاکستان اور بھارت کے درمیان آج کرتار پور راہداری پر بات چیت کا ایک اور دور منعقد ہونا ہے۔

پاکستان

پاکستانی اور ہندوستانی وفود بدھ کے روز (آج) اٹاری بین الاقوامی سرحد پر تبادلہ خیال کے تیسرے دور کا انعقاد کریں گے تاکہ ہند کے گورداس پور ضلع کے ڈیرہ بابا نانک سے گوردوار دربار صاحب ، کرتارپور صاحب کے زائرین کے دورے کے لئے بقیہ طریقوں کو حتمی شکل دی جائے۔ زیر تعمیر کرتار پور راہداری۔

اس سے قبل 30 اگست کو دونوں ممالک کے تکنیکی ماہرین نے ڈیرہ بابا نانک میں ایک میٹنگ کی تھی۔ یہ اجلاس جلدی سے اختتام پزیر ہوا تھا کیونکہ پاکستان کے وفد نے اپنی طرف سے ’’ کشمیر قیامت ‘‘ منانا تھا۔ اس سے پہلے 14 جولائی کو واہگہ میں ہونے والے مذاکرات کے پہلے دور کے دوران ، دونوں فریقوں نے طریقوں کے حوالے سے معاہدے کے مسودے کو حتمی شکل دینے میں کچھ پیشرفت کی تھی۔ ٹائمز آف انڈیا کے ذریعہ شائع ہونے والی ایک رپورٹ کے مطابق ، ہفتہ میں سات دن ہندوستانی پاسپورٹ رکھنے والوں اور اوورسیز سٹیزن آف انڈیا (او سی آئی) کارڈ ہولڈروں کو ویزا فری سفر کی اجازت دینے پر اتفاق کیا گیا۔ مزید یہ بھی فیصلہ کیا گیا ہے کہ سال بھر میں 5،000 عازمین کو کرتار پور صاحب گوردوارہ جانے کی اجازت ہوگی۔ پاکستان نے ہندوستانی حجاج کو بھی انفرادی طور پر یا گروہوں کی شکل میں مزار کے زیارت کے درمیان انتخاب کرنے کی اجازت دی ہے۔ ہندوستان نے پاکستان سے مطالبہ کیا ہے کہ سکھ یاتریوں کو مزار کے القابات میں زائرین کے ل al خیرات (لنگر یا

مفت کھانا) تیار کرنے اور تقسیم کرنے کی اجازت دی جائے۔ اس نے پاکستان سے یہ مطالبہ بھی کیا ہے کہ وہ یومیہ زائرین کی تعداد کو بڑھا کر 10،000 کردیئے اور مطالبہ کیا ہے کہ سکھ مذہب کے علاوہ دیگر عقائد کے زائرین کو بھی گوردوارہ دربار صاحب آنے کی اجازت دی جائے۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ متعدد امور جن میں پاکستان کی طرف سے اجازت نامہ جاری کرنے کا عمل شامل ہے ، حجاج کرام کی تعداد کے بارے میں حتمی اعداد و شمار جو سرحد پار سے سفر کرسکتے ہیں ، سفر کا وقت ، پیدل سفر یاترا ، سیکیورٹی کے معاملات اور نقد عقیدت مندوں کی رقم پاکستان لے جاسکتی ہے۔ بدھ کو ہونے والے مذاکرات کے دوران حتمی شکل دی جائے

Share on facebook
Share on twitter
Share on linkedin
cropped-urdu_khabar_logo.png

ہمارے نیوز لیٹر میں شامل ہوں۔

تازہ ترین مضامین، نوکریاں، مفت، تفریحی خبریں براہ راست اپنے ان باکس میں حاصل کریں۔

170000 سبسکرائبرز یہاں ہیں۔