اے این. ایف کے چھاپے سابق ایم پی اے کے گھر، 130 کلوگرام چاروں کی وصولی

. ملتان سے انسپکٹر کی قیادت میں انسداد منشیات فورس فورس ٹیم نے مسلم لیگ ن کے سابق ایم پی اے فوزیہ ایوب قریشی کے گھر پر حملہ کیا اور دعوی کیا کہ اس کے بیٹے طیب ابیب قریشی کے بارے میں 130 کلوگرام ‘چاراس’ برآمد ہوئے ہیں.

اے این ایف انسپکٹر زوبیر کے مطابق، بہاول پور ملتان روڈ پر بستی مالک کے قریب ایک مشتبہ گاڑی کو بلاک کیا گیا تھا اور دو مبینہ مجرم رضا خالد اور ان کے ملحقہ جھنگ کے رہائشیوں نے انکوائری کیا تھا کہ انھوں نے این این ایف ٹیم کو انکشاف کیا ہے کہ انہوں نے ‘چاراس’ ‘بہاول پور کوزر کالونی میں سابق ایم پی اے فوزیہ ایوب قریشی کے رہائشی علاقے میں. این این ایف ٹیم سابق ایم پی اے کے رہائش گاہ پر پہنچا، جہاں اس کے بیٹے نے اپنے رہائش گاہ کے قریب مویشیوں کے ساتھیوں میں ‘چارس’ کی موجودگی کے بارے میں آگاہ کیا. این این ایف ٹیم کے مطابق، یہ مویشیوں کے گارڈوں میں دفن کیا گیا اور بعد میں یہ ٹیم کی طرف سے گلے لگایا گیا تھا. بعد میں، ٹیم نے طیب ابیب کے دوست عادل اسلم اور طیب کے بھائی کو بھی گرفتار کیا. خبروں نے اکثر ایم پی اے سے رابطہ کرنے کی کوشش کی مگر اس کا فون بند کردیا گیا. یہ ذکر کرنے کے قابل ہے کہ سابق ایم پی اے کے گھر بند ہو گیا ہے اور بحالی کے بعد این این ایف کی طرف سے مویشیوں کا بندہ بند کردیا گیا تھا.

ثاقب شیخ۔